8 فروری، 2020 10:33 AM
Journalist ID: 2392
News Code: 83665371
0 Persons
ایران میں وائرس کورون کا کوئی کیس سامنے نہیں آیا ہے

ساری، ارنا – ایرانی وزیر صحت نے کہا ہے کہ آج تک 8 فروری کو ملک میں خطرناک وائرس کورون کا کوئی مشتبہ کیس سامنے نہیں آیا ہے.

یہ بات ڈاکٹر "سعید نمکی" نے ہفتہ کے روز صحافیوں کے ساتھ گفتگو کرتے ہوئے کہی.
انہوں نے کہا کہ ملک میں کے بعض صوبوں میں چینی مسافروں کے مشکوک نمونوں کی اطلاع ملی اور ان سب کا چیک آپ کیا گیا اور خوش قسمتی سے ان مسافروں میں وائرس کورون کے مثبت نمونے نہیں ملی۔
ڈاکٹر نمکی نے کہا کہ ملک کے تینوں صوبوں کے اسپتالوں میں رکھے ہوئے سو مشتبہ مریضوں کا نمونہ بھی لیا گیا اور کورونا وائرس کے انفیکشن کا کوئی مثبت ثبوت نہیں ملا۔
انہوں نے مزید کہا کہ چین سے ملک میں واپس جانے والے ایرانی طلباء کو چیک آپ کردیا گیا جن میں خطرناک وائرس کورون کا کوئی مشتبہ کیس سامنے نہیں آیا ہے.
کورونا وائرس کی روک تھام کے لیے ائیرپورٹ پر قائم کاؤنٹرز پر ڈاکٹرز اور میڈیکل اسٹاف موجود ہیں جن کاؤنٹرز پر چین اور دیگر مشرقی ایشیائی خطے سے آنے والے تمام مسافروں کا چیک اَپ کیے جا رہے ہیں اور اس مرض سے کوئی مشتبہ کیس کو مزید سخت معائنوں کے لیے اسپتال بھیج دیا جائے گا.
تقریبا 54 ملین افراد ووہان اور چین کے کئی دوسرے شہروں میں قرنطین میں ہیں اور انہیں ملک چھوڑنے کی اجازت نہیں ہے.
چین، عہدیداروں کے کہنے کے مطابق، چین میں خطرناک وائرس کورون کے مرض سے مبتلا افراد کی تعداد 31 ہزار ہوگئی ہے اور نئے کورونا وائرس کے شکار افراد کی تعداد میں تیزی سے اضافہ ہو رہی ہیں۔ اس مرض سے ہلاکتوں کی تعداد ہلاکتوں کی تعداد 638 ہوگئی ہے۔
چین کے علاوہ امریکہ، فرانس، جاپان، ملائیشیا، کینیڈا اور آسٹریلیا میں بھی اس وائرس کا دکھایا گیا ہے.
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
4 + 14 =