امریکہ نے خواراک اور ادویات سے متعلق بینکی چینلز پر پابندی لگائی ہے: ایران

 تہران، ارنا- ایرانی محکمہ خارجہ کے ترجمان نے کہا ہے کہ خواراک اور ادویات سے متعلق ایران کیخلاف پابندیاں عائد نہ کرنے کے امریکی کھوکھلے وعدوں کے برعکس امریکہ نے اس حوالے سے تمام بینکی چینلز پر پابندی لگادی ہے۔

ان خیالات کا اظہار سید "عباس موسوی" نے بدھ کے روز اپنے ایک ٹوئٹر پیغام میں کیا۔

موسوی نے مزید کہا کہ امریکہ نے خواراک اور ادویات سے متعلق نام نہاد انسان دوستانہ چینل کے نفاذ سے یہ ثابت کردیا کہ ان کا یہ وعدہ، عالمی عدالت انصاف کی رائے کیخلاف، جھوٹ ہے اور خواراک و ادویات سے متعلق ایران کیخلاف پابندیاں عائد ہیں جو کہ نہیں ہونا چاہیے۔

 یہ بات قابل ذکر ہے کہ اسلامی جمہوریہ ایران مین تعینات سوئٹزرلینڈ کے سفیر "مار کوس لایتنر" نے حالیہ دونوں میں ایک پریس کانفرنس کے دوران کہا تھا کہ اعضا کی پیوندکاری سے متعلق 180 ہزار ادویات کے پیکجوں کو ایران میں بھیجیں گے اور یہ اقدام ایک اچھا پیغام اور خیر سگالی کی علامت ہے۔

ان ادویات کی بھاؤ 2/3 ملین یورو ہے جن کی ادائیگی سوئٹزرلینڈ کے شہر جینوا کے ایک بینک میں ایران مالی ذخائر سے ہوگی۔

ایرانی حکام بشمول  وزیر خارجہ محمد جواد ظریف نے اس اقدام کے رد عمل میں کہا کہ امریکی اس اقدام نہ صرف خیر سگالی کی علامت ہے بلکہ اس سے یہ ظاہر ہوتی ہے کہ وہ عالمی عدالت انصاف کی رائے کی بھرپور نفاذ نہیں کریں گے۔

اس کے علاوہ نائب ایرانی صدر اسحاق جہانگیری نے کہا کہ اسلامی جمہوریہ ایران نے گزشتہ 10 مہینوں کے دوران 3 ارب ڈالر پر مشتمل ادویات کی درآمدات کی ہیں۔

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
1 + 4 =