17 ہزار غیرملکی سیاحوں کی صوبے ہمدان کے تاریخی مقامات کی سیر

ہمدان، ارنا – رواں سال کے نہ مہینے کے دوران 17 ہزار غیرملکی سیاحوں نے ایرانی صوبے ہمدان کے تاریخی اور سیاحتی مقامات کی سیر کی.

یہ بات ایرانی صوبے ہمدان کے ثقافتی، سیاحتی اور دستکاری صنعت کے منیجینگ ڈائریکٹر "علی مالمیر" نے ہفتہ کے روز ارنا نیوز ایجنسی کے ساتھ گفتگو کرتے ہوئے کہی.
انہوں نے کہا کہ یہ تعداد صرف جن سیاحوں سے متعلق ہے کہ ہوٹلوں اور ریزورٹ ہوٹلوں میں رہائش پذیر تھے.
مالمیر نے کہا کہ غیرملکی سیاحوں کی صوبے ہمدان آمد میں گزشتہ سال کے مقابلے میں 24 فیصد اضافہ دیکھنے میں آیا ہے.
ایرانی صوبے ہمدان اپنی تین ہزار سالہ قدیم تہذیب کے ساتھ دنیا کے قدیم شہروں میں سے ایک تھا اور قرون وسطی کے دور میں پہلے فارسی بادشاہوں کا دارالحکومت تھا۔
ایرانی پارلیمنٹ نے 2007 کو اس صوبے میں 1800 تاریخی اور سیاحتی مقامات کی وجہ سے اسے ایرانی تاریخ اور تہذیب کے دارالحکومت کے طور پر قرار دے دیا.
ہگمتانہ پہاڑی، گنجنامہ کے طومار، ابوعلی سینا کے مزار، بابا طاہر کے مزار، گنبد علویان اور قدرتی مقامات سمیت غار علیصدر ہمدان کے سیاحتی مقامات میں سے ایک ہیں اور فی الحال ایران کے پانچویں سیاحتی شہر کے طور پر شمار کیا جاتا ہے.
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
3 + 3 =