ٹرمپ کا پاگل پن روکنے کیلئے روس اور چین کا ایران سے تعاون اہم قرار

اسلام آباد، ارنا - سنئیر پاکستانی دانشور اور برمنگھم یونیورسٹی کی اعزازی پروفیسر نے اس بات پر زور دیا ہے کہ ٹرمپ کے پاگل بن کو روکنے کے لئے روس اور چین کی ایران کے ساتھ شراکت داری ناگزیر ہے.

یہ بات خاتون پاکستانی محقق "طلعت فاروق" نے پاکستانی اخبار ایکسپریس ٹربیون میں شائع ہونے والے "ایران اور طاقت کا زبردست مقابلہ" کے عنوان سے اپنے مضمون سے کہی۔
انہوں نے مزید کہا کہ امریکہ کے غلطی اقدامات کی وجہ سے اسلامی جمہوریہ ایران، چین اور روس ایسے دباو کے مقابلے کرنے کے لئے باہمی تعاون کر رہے ہیں۔
فاروق نے کہا کہ خطے میں امریکی اثر و رسوخ کم ہوا ہے اسے لئے چین اور روس ایران کی شرکت داری کے ساتھ مغربی ایشیاء میں اپنے کردار بڑھانے کے خواہاں ہیں۔
انہوں نے مشرق وسطی میں حالیہ واقعات پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ حقیقت یہ ہے کہ علاقے میں ایک اور جنگ کے آغاز سیمت اسلامی جمہوریہ ایران اور امریکہ کے درمیان تنازعات سے سنگین نتائج برآمد ہوں گے۔
انہوں نے کہا کہ خطے میں اپنے اسٹریٹجک مفادات کے تحفظ کے نام پر ، طاقت کے توازن کی جانچ کر سکتے ہیں اور امریکی میرینز کی نقل و حرکت کی سطح کو کم کرسکتے ہیں۔
انہوں نے کہا کہ چین اور روس خطے کے اہم کرداروں اور سلامتی کونسل کے مستقل رکن کی حیثیت سے خلیج فارس میں تنازعات کی کمی کے لئے اپنی پوزیشن سے استعمال کرکے ٹرمپ کے جنون پر منہ پر جواب دینا ہوگا۔
خاتون پاکستانی محقق نے کہا کہ ایران روس اور چین کے ساتھ مغربی ایشیاء کے مستقبل کے ترتیب کو تشکیل دے رہا ہے اور امریکہ جوہری معاہدے سے علیحدگی، پابندیوں کی واپسی اور یورپ ٹرمپ کے ایک فریقی پن اقدامات کی حمایت کی وجہ سے اپنے کردار کو کمزور کرتے ہیں۔
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
2 + 1 =