14 جنوری، 2020 12:09 PM
Journalist ID: 2392
News Code: 83633571
0 Persons
ایرانی صوبے سیستان و بلوچستان میں سیلاب کے واقعات

زاہدان، ارنا – پاکستان سے ملحقہ ایران کے سرحدی صوبے سیستان و بلوچستان میں حالیہ بارشوں کی وجہ سے سیلاب کے واقعات رونما ہوئے جس سے بڑے پیمانے پر نقصان ہوا ہے.

ایرانی جنوب مشرقی صوبے سیستان و بلوچستان میں حالیہ دو دن کی شدید بارش ایک سال کی بارش کے برابر ہوتی ہے جس کے نتیجے میں 500 گاؤں، 14 شہر اور 20 ہزار سے عمارتوں کو نقصان پہنچ گیا ہے.
تفصیلات کے مطابق، تباہ کن سیلاب سے تین افراد کے جاں بحق ہونے کے علاوہ صوبے میں زرعی اراضی ، مواصلات اور ٹیلی مواصلات کے آلات اور دیہی سڑکوں کو شدید نقصان پہنچا ہے۔


ایرانی اسپیکر "علی لاریجانی"، وزیر توانائی "رضا اردکانیان" اور وزیر انفارمیشن ٹیکنالوجی "محمد جواد آذری جہرمی" نے منگل کی صبح سیلاب سے متاثرہ علاقوں کا دورہ کیا.
ایرانی سپریم لیڈر حضرت آیت اللہ العظمی "سید علی خامنہ ای" نے گزشتہ روز سرکاری حکام اور عوامی گروہوں کو سیلاب سے متاثرہ علاقوں پر امداد کی فراہمی کا حکم دے دیا.
تفصیلات کے مطابق، 9 جنوری کو صوبے سیستان و بلوچستان میں شدید بارشوں کا آغاز کیا گیا اور 48 گھنٹے تک 124 میلی میٹر جو ایک سال کی بارش کے برابر ہوتی ہے، پہنچ گئی.
صوبے میں ہزاروں امدادی کارکن سیلاب زدگان کی مدد کر رہے ہیں۔
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
8 + 7 =