امریکہ خطے سے نکل جائے: پاکستان کے سیاسی،مذہبی رہنماوں کا مطالبہ

اسلام آباد، ارنا – پاکستان کی ملی یکجہتی کونسل اور سیاسی اور مذہبی جماعتوں کا 35 اتحاد نے ایرانی قدس فورس کے کمانڈر جنرل "قاسم سلیمانی" کی شہادت کو عالم اسلام پر حملہ قرار دیتے ہوئے خطے سے امریکی افواج کے انخلا کا مطالبہ کیا.

ملی یکجہتی کونسل پاکستان کا سربراہی اجلاس کونسل کے صدر ابوالخیر زبیر کی زیر صدارت جماعت اسلامی کے مرکز منصورہ میں منعقد ھوا جس میں اعلی سیاسی اور مذہبی قیادت نے شرکت کی.
جماعت اسلامی تحریک کے سربراہ سینیٹر "سراج الحق" کی میزبانی میں ملی یکجہتی کونسل پاکستان کے سربراہی اجلاس کا شہر لاہور میں انعقاد کیا گیا.
کونسل نے امریکہ کی طرف سے شہید جنرل قاسم سلیمانی پر حملے کی شدید مذمت کرتے ہوئے اسے عالم اسلام پر حملہ قرار دیا.
سیاسی اور مذہبی رہنماوں نے پورے خطے سے امریکی افواج کے انخلا کا مطالبہ کیا.


نائیجیریا میں قید شیعہ رہنما آیت اللہ شیخ ابراھیم زکزکی کو جلد آزاد کرنے کا مطالبہ بھی کیا گیا.
پاکستانی شیعہ اور سنی نامور اور ممتاز سیاسی اور مذہبی رہنماؤں نے عراق میں امریکہ کہ حالیہ دہشتگردی حملے کے نتیجے میں جنرل سلیمانی اور ان کے ساتھیوں کی شہادت کی مذمت کی.
جنرل قاسم سلیمانی اور ان کے ساتھیوں کی شہادت سے 12 دن گزرنے کے باوجود ابھی بھی اسلامی جمہوریہ ایران سمیت دوسرے اسلامی ممالک بالخصوص پاکستان میں احتجاجی مظاہرے جاری ہیں.
تفصیلات کے مطابق 3 جنوری کو عراق کے دارالحکومت بغداد کے ایئرپورٹ پر امریکہ کی جانب سے راکٹ حملے کیے گئے جس کے نتیجے میں پاسداران انقلاب کے کمانڈر قدس جنرل قاسم سلیمانی سمیت عراق کی عوامی رضاکار فورس الحشد الشعبی کے ڈپٹی کمانڈر "ابومهدی المهندس" شہید ہوگئے۔
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
1 + 1 =