12 جنوری، 2020 7:20 PM
Journalist ID: 1917
News Code: 83631326
0 Persons
پاکستانی وزیر خارجہ کا ایران سے تعلقات کے فروغ پر زور

 مشہد، ارنا- ایران کے دورے پر آئے ہوئے پاکستانی وزیر خارجہ نے دونوں ملکوں کے درمیان اچھے اور دیرینہ تعلقات کا ذکر کرتے ہوئے باہمی تعلقات کے فروغ اور تحفظ پر زور دیا۔

ان خیالات کا اظہار شاہ محمود قریشی نے اتوار کے روز خراسان رضوی کے گورنر جنرل کیساتھ ایک ملاقات میں گفتگو کرتے ہوئے کیا۔

انہوں نے حالیہ سالوں کے دوران مشکلات اور چیلنجنوں کے سامنے ایرانی حکومت اور عوام کی مزاحمت کو سراہتے ہوئے اس امید کا اظہار کرد یا کہ وہ ملک میں رونما ہونے والے حالیہ چیلنجنوں اور مشکلات حالات کا پس پشت ڈالتے ہیں۔

 پاکستانی وزیر خارجہ نے کہا کہ ان چیلنجوں میں سے بعض بشمول پابندیوں کو دور کرسکتے ہیں اور دوستی، پر خلوص تعلقات اور باہمی اعتماد سے ان ساری رکاوٹوں کو ہٹا سکتے ہیں۔

انہوں نے سالانہ ہزاروں پاکستانی زائرین کے سفر مشہد اور روضے امام رضا علیہ السلام کی زیارت پر تبصرہ کرتے ہوئے اس کو دونوں ملکوں کے درمیان ایک اچھے تجارتی موقع فراہم کرنے میں تعمیری قرار دے دیا۔

قریشی نے کہا کہ  صوبے خراسان رضوی کو ایک خاص روحانی اہمیت حاصل ہے اور اس کی وجہ سے اس صوبے اور خطے کے ممالک کے مابین تجارت میں توسیع ہوئی ہے۔

انہوں نے مذہبی شہر مشہد سے دورہ ایران کے آغاز کو اپنے لیے فخر قرار دیتے ہوئے کہا کہ اس زیارت نے مجھے ایک خاص روحانی احساس بخشا اور وه ایک خاص اور اطمینان بخش تجربہ تھا۔

پاکستانی وزیر خارجہ نے اعلی ایرانی کمانڈر جنرل قاسم سلیمانی کی شہادت پر ایرانی حکومت اور عوام کو تعزیت کا اظہار پیش کیا۔

اس موقع پر خراسان رضوی کے گورنر جنرل "علیرضا رزم حسینی" نے کہا کہ مشہد میں واقع روضے امام رضا علیہ السلام کی وجہ سے سالانہ 3 کروڑ ملکی اور غیر ملکی سیاح نے مشہد کا رخ کرلیتے ہیں۔

رزم حسینی نے کہا کہ مشہد بین الاقوامی ہوائی اڈے سے دوسرے صوبوں اور بیرون ملک روزانہ کی 250 پروازیں بھی ہیں اور مشہد سے خطے کے اکثر علاقائی ممالک کی براہ راست پروازیں ہیں۔

انہوں نے اس امید کا اظہار کردیا کہ تہران میں ایرانی حکام سے پاکستانی وزیر خارجہ کے ہونے والے مذاکرات، دونوں ملکوں کیلئے تعمیری ثابت ہوں گے۔

واضح رہے کہ پاکستانی وزیر خارجہ مشہد میں امام رضا کے روضے مطہر کی زیارت کے بعد تہران کے دورے پر روانہ ہوگئے۔

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
4 + 4 =