پاکستان میں ایک با پھر امریکہ مردہ باد کا نعرہ گونج اٹھا

اسلام آباد، ارنا- امریکی دہشتگردانہ حملے میں اعلی ایرانی کمانڈر جنرل قاسم سلیمانی کی شہادت کے دسویں دن کے موقع پر پاکستان کے چھوٹے بڑے شہروں میں ٹرمپ کے سنگین جرائم کیخلاف احتجاج کیا گیا اور پوری فضا میں امریکہ مرد باد کا نعرہ گونج اٹھا۔

رپورٹ کے مطابق پاکستان میں ہزاروں سیاسی، مذہبب کارکنوں، طالب علموں، مزاحمتی فرنٹ کے حامیوں نے ایک بار پھر امریکی حملے میں جام شہادت نوش کرنے والے جنرل قاسم سلیمانی کی شہادت پر سڑکوں پر نکل آئے اور امریکہ اور ان کے حامیوں کیخلاف نعرہ لگایا۔

پاکستانی مظاہرین نے ریاست پنجاب کے صوبائی دارالحکومت لاہور جہاں امریکی قونصلیٹ قائم ہے، میں امریکہ کیخلاف اپنے احتجاج کا آغاز کیا۔

لاہور میں معاشرے کے سارے طبقوں سے تعلق رکھنے والے مرد اور خواتین نے امریکی مخالف مظاہرہ میں حصہ لیا اور  جام شہادت نوش کرنے والے قدس فورس کے کمانڈر جنرل قاسم سلیمانی اورعراق کی رضا کار تنظیم الحشد الشعبی کے ڈپٹی کماندر ابومہدی مہندس کیساتھ خراج عقیدت پیش کیا۔

انہوں نے پاکستانی حکومت سے مطالبہ کیا کہ وہ بھی خطے میں امریکی خفیہ منصوبہ بندیوں سے متعلق چوکس رہے اور غیر علاقائی طاقتوں کے پروپیگنڈوں سے علاقے کے مشترکہ خطروں ارو امریکی اور مغربی اتحادیوں کے لاحق خطرات سے غافل نہ رہے۔

اس کے علاوہ دارالحکومت اسلام آباد میں بھی درجنوں افراد نے سڑکوں پر نکل کر امریکہ کیخلاف احتجاج کیا اور سبوں نے ایک ہوکر " امریکہ مردہ باد" کا نعرہ لگایا۔

شیعہ دفاع کونسل کے زیر اہتمام اجتماع میں پاکستان کے سیاسی و مذہبی شخصیات خصوصا مختلف شہروں کے مذہبی رہنماؤں نے شرکت کی۔

اس موقع پر پاکستانی مذہبی رہنما علامہ مذہبی درسگاہ "عروہ الوثقی" کے سربراہ "سید جواد نقوی" نے خطاب کرتے ہوئے اعلی ایرانی کمانڈر اور ان کے ساتھیوں کی شہادت پر ایرانی اور عراقی حکومتوں اور عوام کیساتھ تعزیت کا اظہار کرد یا۔

 اس کے علاوہ پاکستانی فوج کے سابق کمانڈر "میرزا اسلم بیگ" نے بھی خطاب کرتے ہوئے کہا کہ اسلام کا دشمن امریکہ چند اسلامی ممالک کیخلاف جارحیت کے بعد اب جنرل قاسمی سلیمانی کی شہادت کیساتھ ایران پر کاری ضرب لگانے کے درپے تھے لیکن ایرانیوں نے اس کا منہ ٹور جواب دیا۔

آخر میں مظاہرین نے ایک بیان میں امریکی حالیہ اقدامات کی مذمت کرتے ہوئے مزاحمتی فرنٹ کیساتھ یکجہتی کا اعلان کردیا اور پاکستانی حکومت سے مطالبہ کیا کہ وہ خطے کی مسلم اقوام کے حقوق کا دفاع کریں اور اس بات کو یقینی بنائیں کہ وہ دوسروں کی خواست سے کبھی تنازعہ میں نہیں آئے گا۔

یہ بات قابل ذکر ہے کہ 3 جنوری کو عراق کے دارالحکومت بغداد کے ایئرپورٹ پر امریکہ کی جانب سے راکٹ حملے کیے گئے جس کے نتیجے میں پاسداران انقلاب  کے کمانڈر قدس جنرل قاسم سلیمانی سمیت عراق کی عوامی رضاکار فورس الحشد الشعبی کے ڈپٹی کمانڈر "ابومهدی المهندس" شہید ہوگئے۔

امریکی ڈرون حملے میں جام شہادت نوش کرنے والے جنرل قاسم سلیمانی کی نماز جنازہ پیر کے روز ایران کے سپریم لیڈر آیت اللہ علی خامنہ ای کی امامت میں تہران میں ادا کی گئی جس میں لاکھوں لوگوں نے شرکت کی۔

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
3 + 2 =