یوکرائنی طیارے کے متاثرین کے قونصلر مسائل کے جائزہ لینے کا خصوصی کمیشن قائم کیا گیا: ایران

تہران، ارنا – ایرانی وزارت خارجہ میں یوکرائنی طیارے گرجانے کے متاثرین کے قونصلر مسائل کے جائزہ لینے کے لئے ایک خصوصی کمیشن قائم کیا گیا.

ایرانی وزارت خارجہ کے ترجمان "سید عباس موسوی" نے تہران کیف طیارے گرجانے کے نتیجے میں 176 مسافر اور عملے کے جاں بحق ہونے پر اپنے افسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ ایرانی صدر اور وزیر خارجہ کے حکم کی مبنی پر ان متاثرین کے قونصلر مسائل کے جائزہ لینے کے لئے ایک کمیشن قائم کیا گیا.
موسوی نے کہا کہ اسلامی جمہوریہ ایران کے تمام سیاسی، قونصلر، ملکی اور ہوائی اڈے کے دفاتر کو اس مسئلے کے جائزہ لینے کا حکم دیا گیا ہے.
انہوں نے اس بات پر زور دیا کہ ایرانی وزارت خارجہ یوکرائنی طیارے گرجانے کے نتیجے میں انسانی جانوں کے ضیاع پر گہرے دکھ اور افسوس کا اظہار کر رہی ہے.
خیال رہے ایران کی جانب سے عراق میں امریکی فوجی اڈوں پر میزائل حملے ختم ہونے کے کچھ گھنٹے بعد یوکرین کا طیارہ ایران کے امام خمینی ائیرپورٹ کے قریب گر کر تباہ ہوگیا جس میں سوار 167 مسافر اور 9 عملے جاں بحق ہوگئے تھے۔
مسافر طیارہ تہران سے یوکرین کے دارالحکومت کیف جا رہا تھا.
ایرانی مسلح افواج اندرونی تحقیقات کے بعد اس نتیجے پر پہنچیں کہ میزائل انسانی غلطی کی وجہ سے فائر ہوا جس کے نتیجے میں یوکرائنی طیارہ تباہ ہوا، اور معصوم لوگ جاں بحق ہوگئے۔
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
6 + 8 =