امریکہ علاقائی اور عالمی اہداف حاصل کرنے میں ناکام رہا: ایرانی صدر

تہران، ارنا - ایرانی صدر نے کہا ہے کہ امریکہ جنرل سلیمانی کو شہید کرکے اس کے سنگین نتائج سے لاتعلق نہیں رہ سکتا بلکہ اسے اس مکروہ اقدام کا جواب دینا ہوگا.

ان خیالات کا اظہار ڈاکٹر حسن روحانی نے بدھ کے روز دارالحکومت تہران میں کابینہ کے اجلاس میں خطاب کرتے ہوئے کیا۔

صدر روحانی نے مزید کہا کہ امریکیوں نے ایران کے اندر تفرقہ پیدا کرنے، علاقائی سطح پر خوف و تفریق پیدا کرنے، عراقی حکومت اور قوم کو ایرانی عوام سے دور کرنے اور علاقائی پیشرفتوں اور خطے کو مداخلت پسندوں اور دہشتگردوں سے مکمل طور پر آزاد کرنے کی کوششوں کو متاثر کرنے کی کوشش کی تھی جو خوش قسمتی سے سب میں ناکام ہوگئے۔

انہوں نے جنرل قاسم سلیمانی کے جنازے پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ اس عظیم کمانڈر اور اس کے ساتھیوں  کیلئے تاریخ کی سب سے طویل تشیع جنازہ ادا کی گئی۔

صدر روحانی نے مزید کہا کہ امریکہ نے اس بزدلانہ حرکت کیساتھ، ایک تاریخی غلطی کی۔

انہوں نے جنرل سلیمانی کی شہادت کا بدلہ لینے کیلئے عراق میں امریکی فوجی اڈے پر ایرانی میزائل حملوں پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ امریکہ کا منہ ٹور جواب دیا گیا۔

ایرانی صدر نے عراقی پارلمینٹ میں امریکی فوجیوں کی واپسی کا بل پاس کیے جانے کو بھی امریکی جرائم کا اور جواب قرار دے دیا۔

صدر روحانی نے کہا کہ عراقی پارلیمنٹ نے اس بہادارنہ اقدام سے عراق اور پھر خطے سے امریکہ کی مکمل واپسی کیلئے راستہ ہموار کر دیا۔

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
4 + 5 =