7 جنوری، 2020 3:33 PM
Journalist ID: 1917
News Code: 83624928
0 Persons
ٹرمپ مشرق وسطی کی صورتحال کو ابتر کرنے جار رہا ہے: ظریف

تہران، ارنا- اسلامی جمہوریہ ایران کے وزیر خارجہ نے سی این این نیوز چینل کیساتھ گفتگو کرتے ہوئے امریکی حملے میں قدس فورس کے کمانڈر جنرل سلیمانی کی شہادت پر تبصرہ کیا اور کہا ہے کہ امریکی صدر، اپنے اقدمات سے صرف مشرق وسطی کی صورتحال کو ابتر کرنے جا رہا ہے۔

سی این این نیوز چینل نے ظریف کے مطابق لکھا ہے کہ امریکی فضائی حملے میں جنرل سلیمانی کی شہادت کے بعد اسلامی جمہوریہ ایران، امریکہ کے کسی بھی فوجی کاروائی سے خوفزدہ نہیں ہے۔

علاقائے کے لوگ ٹرمپ کے اقدامات سے غصے میں ہیں

 ظریف نے مزید کہا کہ خطے کے عوام ہمارے حق میں ہیں، "خوبصورت فوجی سازوسامان" (ٹرمپ کی دھمکی آمیز ٹوئٹر پیغام کا حوالہ دیتے ہوئے) دنیا پر حکمرانی نہیں کرتے، بلکہ وہ لوگ ہیں جو دنیا پر حکمرانی کرتے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ ٹرمپ کو اس حقیقت پر نظر ڈالنی ہے کہ خطے کے عوام شدید ناراض ہیں اور ان کی خواست یہ ہے کہ امریکہ خطے سے چلے جائے۔

ظریف نے امریکہ کیخلاف ایرانی کی جوابی کاروائی کی صورت میں امریکہ کیجانب سے مزید حملوں کے امکان سے متعلق سوال کے جواب میں کہا کہ ٹرمپ، ایران سے معافی مانگنا چاہیے اور اپنے رویے کو بدلنا چاہیے۔

 انہوں نے کہا کہ ٹرمپ صرف امریکہ کی صورتحال کو خراب کررہے ہیں  انہوں نے ہمارے خطے کی اقوام کو ناراض کیا ہے۔

 ظریف نے کہا کہ ٹرمپ نے خود کہا ہے کہ امریکہ نے ہمارے خطے میں سات کھرب ڈالر ضائع کیے ہیں اور اب انہوں نے جنرل سلیمانی کے قتل میں اس میں مزید ایک کھرب ڈالر کا اضافہ کردیا ہے۔

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
5 + 8 =