روس نے جنرل سلیمانی کے قتل کو عالمی قوانین کیخلاف قرار دیا

نیویارک، ارنا – اقوام متحدہ میں روسی نمائںدے نے جنرل سلیمانی کے قتل کے لیے امریکی دہشتگردی اقدام کو بین الاقوامی قوانین کے منافی قرار دیا.

یہ بات دیمیتری پولیانسکی نے اتوار کے روز ٹوئیٹر میں اپنے ذاتی پیج پر لکھی.
روسی نمائندے نے مزید کہا امریکہ کے ہاتھوں جنرل سلیمانی کے قتل چاہئے اس کا کوئی بھی مقصد ہو، عالمی قوانین کی کھلی خلاف ورزی ہے.
ان کے مطابق، اگر عالمی نظم و ضوابط بھی ایسی کاروائی کو جواز قرار دے تب بھی یہ ایک مجرمانہ اقدام ہوگا.
روسی مندوب نے ہم ایران کے خلاف دیگر غیر مصدقہ دعووں کی طرح اس دعوے کو مسترد کرتے ہیں.
یاد رہے کہ جمعہ کی علی الصبح کو عراق کے دارالحکومت بغداد کے ایئرپورٹ کے قریب امریکہ کی جانب سے راکٹ حملے کیے گئے جس کے نتیجے میں پاسداران انقلاب کے کمانڈر قدس جنرل قاسم سلیمانی سمیت عراق کی عوامی رضاکار فورس الحشد الشعبی کے ڈپٹی کمانڈر "ابومهدی المهندس" شہید ہوگئے۔
ایرانی دارالحکومت تہران میں پاسداران انقلاب کے کمانڈر قدس فورس شہید جنرل قاسم سلیمانی اور ان کے ساتھیوں کے جنازے کا آج آغاز ہوگیا ہے جنہیں الوداع کرنے کے لئے لاکھوں ایرانی امڈ آئے.
ایرانی قائد اسلامی انقلاب آیت اللہ العظمی "سید علی خامنہ ای" شہید قاسم سلیمانی اور ان کے ساتھیوں کے جسم خاکی پر نماز جنازہ ادا کیا.
شہید قاسم سلیمانی کے جسم خاکی کو منگل کے روز اپنے آبائی علاقے صوبے کرمان میں سپرد خاک کیا جائے گا.
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
3 + 8 =