دوست اور ہمسایہ ممالک، امریکی جرائم کی مذمت کریں: صدر روحانی

تہران، ارنا - ایرانی صدر نے کہا ہے کہ جنرل سلیمانی کی شہادت امریکی حکمرانوں کا ناقابل تلافی جرم ہے جس کی دوست اور ہمسایہ ممالک کو چاہئے کہ ایک ہو کر مذمت کریں.

ان خیالات کا اظہار ڈاکٹر حسن روحانی نے اتوار کے روز افغان صدر "اشرف غنی" کیساتھ ایک ٹیلی فونک رابطے کے دوران گفتگو کرتے ہوئے کیا۔

اس موقع پر انہوں نے قدس فورس کے کمانڈر جنرل قاسم سلیمانی کی شہادت کو ایرانی قوم کیلئے ایک بہت بڑی مصیبت قرار دے د یا۔

ایرانی صدر نے امریکہ کے غیر قابل بھروسہ ہونے پر زور دیتے ہوئے کہا کہ اسلامی جمہوریہ ایران نے کبھی کسی جارحیت کا آغاز نہیں کیا ہے اور ہمارے اقدامات صرف امریکی جارجیت کے رد عمل میں تھے۔

انہوں نے حالیہ سالوں کے دوران ایران اور افغانستان کے درمیان تعلقات کے فروغ کا حوالہ دیتے ہوئے اس امید کا اظہار کردیا کہ دونوں فریقین کے حکام کی حکمت عملی سے دونوں ملکوں کے سیاسی، اقتصادی اور ثقافتی تعلقات میں مزید اضافہ ہوجائے گا۔

صدر روحانی نے مزید کہا کہ افغانستان میں قیام امن و سلامتی، ایران کیلئے بڑی اہمیت رکھتا ہے اور ہم افغانستان میں قیام امن کو دونوں ملکوں کے عوام کے مفادات میں سمجھتے ہیں۔

انہوں نے جنرل سلیمانی کی شہادت پر افغان صدر کی ہمدری پر شکریہ ادا بھی کیا۔

اس موقع پر افغان صدر مملکت نے جنرل قاسم سلیمانی کی شہادت پر گہرے افسوس کا اظہار کرتے ہوئے ایرانی عوام اور حکومت کو تعزیت کا اظہار پیش کیا اور کہا کہ ہم اپنے مسلم برادر ملک کے غم میں برابر کے شر یک ہیں۔

انہوں نے علاقے میں دونوں ملکوں کے مشترکہ مفادات کے تحفظ پر زور دیتے ہوئے کہا کہ ایران کی سلامتی ہماری سلامتی ہے اور ہم خطے میں قیام امن و سلامتی کیلئے کسی بھی کوشش سے دریغ نہیں کریں گے۔

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@