آج رات، جوہری معاہدے کے مستقبل کا فیصلہ کیا جائے گا: ایران

تہران، ارنا- ایرانی محکمہ خارجہ کے ترجمان نے کہا ہے کہ آج رات جوہری معاہدے کے پانچویں مرحلے سے متعلق ایک اہم اجلاس کا انعقاد ہوگا جس کا نتیجہ ان تمام کیے گئے فیصلوں پر اثرانداز ہوسکتا ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ ان فیصلوں سے جوہری معاہدے کے نفاذ اور آئندہ کے اقدمات سے متعلق حکمت عملی کا تعین کیا جائے گا۔

ان خیالات کا اظہار سید عباس موسوی نے آج بروز اتوار کو صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔

انہوں نے جوہری وعدوں کے پانچویں مرحلے کے نفاذ سے متعلق بات کرتے ہوئے کہا کہ اس حوالے سے کچھ فیصلے کیے گئے تھے لیکن موجودہ صورتحال کے پیش نظر آج کی رات کو ایک اہم اجلاس کا انعقاد ہوگا جس کا نتیجہ ان تمام فیصلوں پر اثر انداز ہوسکتا ہے۔

موسوی نے یورپی یونین کیجانب سے ایرانی وزیر خارجہ کو دورہ بروسلز کی دعوت پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ اس حوالے سے باہمی مشاورت جاری ہے لیکن ابھی حتمی فیصلہ نہیں کیا گیا ہے۔

علاقائی مکالمے کا اجلاس 7 دسمبر کو منعقد ہوگا

ایرانی محکمہ خارجہ کے ترجمان نے کہا کہ دارالحکومت تہران میں علاقائی مکالمے کے اجلاس کا ملکی اور غیر ملکی نمائندوں کی شرکت سے 7 دسمبر کو منعقد ہوگا جس میں ہرمز امن منصوبے پر خصوصی توجہ دی جائے گی۔

انہوں نے دھمکیوں کے تحت امریکہ کیساتھ مذاکرات سے متعلق سوال کے جواب میں کہا کہ اسلامی جمہوریہ ایران اور محکمہ خارجہ کبھی بھی دھمکیوں اور دباؤ کے تحت مذاکرات نہیں کرے گا۔

موسوی نے کہا کہ یہ مسئلہ موجودہ صورتحال میں ملک کیلئے نقصان دہ ہے اور محکمہ خارجہ، حکومت کے حکم کے مطابق عمل کرے گا اور جب تک کسی حکم کا وصول کرے تو بڑی سنجیدگی سے اس پر عمل کرے گا۔

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
5 + 3 =