ایرانی وزیر خارجہ کا یورپی یونین کی خارجہ پالیسی کے سربراہ سے ٹیلی فونک رابطہ

تہران، ارنا – ایرانی وزیر خارجہ نے آج بروز اتوار یورپی یونین کی خارجہ پالیسی کے سربراہ نے جوسپ بورل" کیساتھ ٹیلی فونک رابطہ کیا.

فریقین نے اس ٹیلی فونک رابطے کے دوران خطے میں حالیہ کشیدگی، امریکی ریاستی دہشت گردی اور جوہری معاہدے کی تازہ ترین پیشرفتوں پر بات چیت کی.

بورل نے امریکہ کی دہشتگردی فورسز کے ہاتھوں میں جنرل سلیمانی کے قتل کے بعد اس واقعے پر تمام فریقین سے صبر و تحمل کرنے کا مطالبہ کرتے ہوئے مزید کشیدگی سے بچنے کی ضرورت پر زور دیا.

انہوں نے کہا کہ علاقائی سلامتی کے لیے جوہری معاہدے کے تعمیری کردار کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ وہ بطور کوآرڈینیٹر اس شعبے میں اپنے فرائض پر عمل کریں گے.

قابل ذکر ہے کہ جوسپ بورل نے جمعہ کے روز بغداد میں امریکی دہشتگردی حملے میں ایرانی جنرل کی شہادت کے بعد ایک بیان جاری کرتے ہوئے تمام فریقین کو صبر و تحمل کا مظاہرہ کرنے کی دعوت دی.

تفصیلات کے مطابق جمعہ کی علی الصبح کو عراق کے دارالحکومت بغداد کے ایئرپورٹ پر امریکہ کی جانب سے راکٹ حملے کیے گئے جس کے نتیجے میں پاسداران انقلاب  کے کمانڈر قدس جنرل قاسم سلیمانی سمیت عراق کی عوامی رضاکار فورس الحشد الشعبی کے ڈپٹی کمانڈر "ابومهدی المهندس" شہید ہوگئے۔

قائد اسلامی انقلاب نے جمعہ کے روز جنرل سلیمانی کی مظلومانہ شہادت پر ایران میں تین روزہ عام سوگ کا اعلان کیا.
ایرانی وزارت خارجہ نے اپنے ایک بیان میں امریکہ کے دہشتگردی اقدام کی مذمت کرتے ہوئے ایک ہنگامی نشست کا انعقاد کیا.
اسلامی جمہوریہ ایران نے تہران میں تعینات سوئٹزرلینڈ کے سفیر جن کا ملک امریکی مفادات کا نگہبان ہے، کو محکمہ خارجہ میں طلب کیا اور امریکی پیغام کا جواب ان کے حوالے کردیا.

رہبر معظم انقلاب اسلامی حضرت آیت اللہ العظمی خامنہ ای نے اپنے حکم میں جنرل قاآنی کو شہید میجر جنرل قاسم سلیمانی کی شہادت کے بعد سپاہ قدس کا نیا سربراہ مقرر کیا ہے۔

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
9 + 3 =