افغان چیف ایگزیکٹو کا جنرل سلیمانی کی شہادت پر تعزیت کا اظہار

تہران، ارنا - افغان چیف ایگزیکٹو "عبداللہ عبداللہ" نے حکومت ایران اور عوام سے قدس فورس کے کمانڈر جنرل قاسم سلیمانی کی شہادت پر تعزیت کا اظہار کیا ہے.

تفصیلات کے مطابق "محمد جواد ظریف" نے آج بروز ہفتہ کو ایک ٹیلی فونک رابطے میں افغان چیف ایگزیکٹو کیساتھ  باہمی تعلقات کی تازہ ترین صورتحال اور علاقے کے اہم ترین مسائل پر بات چیت کی۔

اس موقع پر عبداللہ عبداللہ نے امریکی حملے میں جام شہادت نوش کرنے والے پاسداران انقلاب فورس کی القدس بریگیڈ کے کمانڈر لیفٹیننٹ جنرل قاسم سلیمانی کی شہادت پر گہرے دکھ اور افسوس کا اظہار کرتے ہوئے ایرانی حکومت اور عوام بالخصوص آپ کے اہل خانوں کیساتھ تعزیت کا اظہار کردیا۔

یہ بات قابل ذکر ہے کہ محمد جواد ظریف نے گزشتہ روز اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل "انٹونیو گوترش" کیساتھ گفتگو کرتے ہوئے امریکہ کے ہاتھوں جنرل قاسم سلیمانی کی مظلومانہ شہادت کو دہشتگردی اور مجرمانہ عمل قرار دیا.

انہوں نے آج بروز ہفتہ کو بھی اپنے قطری ہم منصب "محمد بن عبدالرحمن بن جاسم آل ثانی" کیساتھ  ملاقات اور خطے کی تازہ تریں تبدلیوں پر تبادلہ خیال کیا۔

تفصیلات کے مطابق جمعہ کی علی الصبح کو عراق کے دارالحکومت بغداد کے ایئرپورٹ پر امریکہ کی جانب سے راکٹ حملے کیے گئے جس کے نتیجے میں پاسداران انقلاب  کے کمانڈر قدس جنرل قاسم سلیمانی سمیت عراق کی عوامی رضاکار فورس الحشد الشعبی کے ڈپٹی کمانڈر "ابومهدی المهندس" شہید ہوگئے۔

سپاہ پاسداران انقلاب اسلامی کے شعبہ تعلقات عامہ کے جاری کردہ بیان کے مطابق شہید جنرل قاسلم سلیمانی اور ان کے ساتھیوں کے جسد خاکی کو ایران لانے کے بعد اتوار پانچ جنوری کو مشہد مقدس لے جایا جائے گا جہاں بارگاہ امام علی ابن موسی الرضا علیہ السلام میں نماز جنازہ ادا کی جائے گی ۔

شہید قاسم سلیمانی اور ان کے ساتھیوں کے جسد خاکی پیر کی صبح تہران لائے جائیں گے اور نماز جنازہ ادا کرنے کے بعد ان کے آبائی شہر کرمان منتقل کردیے جائیں گے۔۔ 

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
5 + 9 =