عراق میں مشتعل مظاہرین نے امریکی سفارتخانے پر دھاوا بول دیا

بغداد، ارنا - عراق میں سینکڑوں مشتعل مظاہرین نے بغداد میں قائم امریکی سفارتخانے کو گھیراو میں لے اس کے جھنڈے کو نذر آتش کرنے کے علاوہ عمارت میں داخل ہونے کی بھی کوشش کی.

مظاہرین نے حشد الشعبی پر امریکی فضائی حملے پر برہمی کا اظہار کرتے ہوئے ، "امریکہ مردہ باد" اور "اسرائیل مردہ باد" کے نعرے لگاتے ہوئے سفارتخانے کے نگرانی والے کیمرے اور سیکیورٹی کی کوکس کو مسمار کردیا۔
کچھ مظاہرین نے بغداد میں سفارتخانے کے آس پاس سیمنٹ کے بلاکس پر "موت سے امریکہ" کا نعرہ لکھ کر حشد الشعبی اڈے پر حملہ کرنے کے حالیہ امریکی جرم پر بھی غم و غصے کا اظہار کیا۔


مظاہرین نے پناہ گزین گرین زون میں امریکی سفارتخانے کا دروازہ توڑ دیا ، جہاں بغداد میں سرکاری عمارتیں واقع تھیں۔
مظاہرین نے سفارتخانے کی عمارت میں داخل ہونے سے پہلے بیرونی دیوار کو نذر آتش کردیا۔
امریکی محکمہ دفاع نے اپنے سفارت کاروں پر حملے کے جواب میں ایک روز قبل ہی اعلان کیا تھا کہ حزب اللہ بریگیڈوں نے مجموعی طور پر عراق اور شام کے پانچ ٹھکانوں پر فضائی حملے کیے ہیں۔
عراقی وزارت دفاع نے الانبار کے الخارص اور سیلم اضلاع میں دو عہدوں پر امریکہ کے تین فضائی حملوں کی اطلاع دی۔
عراقی وزارت صحت نے اعلان کیا ہے کہ امریکہ اتوار کی رات عراقی حزب اللہ فوج کے اڈوں پر حملہ کیا جس کے نتیجے میں 25 افراد شہید ہوگئے ہیں۔
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
1 + 3 =