ایران کے عیسائی رکن پارلیمنٹ کی اسلام مخالف ڈچ سیاستدان کی شدید مذمت

تہران، ارنا - نیدرلینڈز میں ایک انتہاپسند سیاستدان کی جانب سے نبی کریم (ص) کے توہین آمیز خاکوں کی نمائش کے بعد اسلامی جمہوریہ ایران کی پارلیمنٹ کے عیسائی نمائندے نے شیطانی اقدام کی بھرپور مذمت کی ہے.

"یوناتن بت کلیا" نے پیر کے روز اپنے ایک بیان میں ڈچ سیاستدان کے اسلام مخالف گھناؤنی اقدام کی مذمت کی.
انہوں نے کہا کہ ڈچ سیاستدان نے اپنے توہین آمیز اقدام کے ساتھ ایک بار پھر آزاد قوموں کو ناراض دے کر نہ صرف مسلمانوں بلکہ ہر آزاد آدمی کی دل کو مجروح کردیا.
کلیا نے کہا کہ ڈچ انتہاپسند دائیں جماعت کے رہنما خیرت ویلدرز کے غیرانسانی اقدام وہ اور ان کے حامیوں کے بے وقوفی کی علامت ہے جو بڑھتے ہوئے تنازعات کا باعث بن گیا ہے.
انہوں نے اس بات پر زور دیا کہ انسانی حقوق کے حامی کے دعوے کرنے والی تنظیمیں ایران عزیز کی مذمت کے بجائے ان شرپسند افراد جو مختلف ادیان کے درمیان نفرت پھیل رہے ہیں کو خاموشی پر مجبور کریں.
ایران کے عیسائی فرقے آشوری سے تعلق رکھنے والے رکن پارلیمنٹ نے کہا ہے کہ اسلامی جمہوریہ ایران ہمیشہ مختلف ادیان کے پیروکاروں کی حمایت کرتا ہے لہذا ہم تمام عالمی تنظیموں سے ایسے غیرانسانی اقدامات کو روکنے کے لئے سنجیدہ اقدامات اٹھانے کا مطالبہ کر رہے ہیں.
تفصیلات کے مطابق، اسلام مخالف ڈچ سیاستدان "گرت وایلدرز" نے گزشتہ روز اعلان کردیا ہے کہ نبی کریم (ص) کے توہین آمیز خاکوں کی نمائش جو گزشتہ سال مسلمانوں کے خوف سے روک کردی گئی تھی، ایک بار پھر بحال ہوگی.
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
6 + 1 =