ایران اور پاکستان کے مابین ہیلتھ ٹورازم کو منظم کیا جائے: لاریجانی

اسلام آباد، ارنا - اسلامی جمہوریہ ایران کے نائب وزیر صحت برائے طبی تعلیم نے کہا ہے کہ صحت اور طبی لحاظ سے ایران میں اچھی صلاحیتیں ہیں اور یہ فیصلہ کیا گیا ہے کہ ایران اور پاکستان کے درمیان ہیلتھ ٹورازم کی سرگرمیوں کو منظم کیا جائے گا۔

یہ بات 'باقر لاریجانی' نے ہفتہ کے روز ارنا کے نمائندے کے ساتھ گفتگو کرتے ہوئے کہی.
انہوں نے طبی سیاحت کے شعبے میں علاقائی ممالک کے ساتھ ایران کی نمایاں صلاحیتوں کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ خوش قسمتی سے ایران میں خدمات مہیا کرنے کی اچھی صلاحیت موجود ہے اور علاقائی ممالک کے بہت سے لوگ ان سہولیات سے فائدہ اٹھانے کے لیے ایران کا دورہ کر رہے ہیں.
لاریجانی نے کہا کہ آج ملک میں 1000 اسپتالز موجود ہیں جن کے 80 فیصد میڈیکل یونیورسٹیوں سے وابستہ ہیں.
انہوں نے رواں سال کے مئی مہینے میں کہا کہ پاکستانی نائب وزیر صحت ظفر میرزا کے دورے ایران کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ پاکستان ایرانی وزیر صحت کے دورے پاکستان کے لیے آمادہ ہے.
یہ بات قابل ذکر ہے کہ پاکستانی وزیر اعظم کے معاون خصوصی برائے صحت نے گزشتہ مہینوں کے دوران تہران میں 66 ویں مشرقی بحیرہ روم کے علاقائی وزرائے صحت کے اجلاس کے موقع پر ایرانی وزیر صحت "سعید نمکی" کیساتھ ملاقات کی۔
تفصیلات کے مطابق "باقر لاریجانی" کی قیادت میں ایرانی وفد نے جمعرات کے روز کراچی میں مختلف میڈیکل یونیورسٹیوں کا دورہ کیا.
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
7 + 3 =