28 دسمبر، 2019 10:03 AM
Journalist ID: 2393
News Code: 83610585
0 Persons
ایران اور روس کیساتھ مشترکہ بحری مشق معمول کی بات ہے: چین

بیجنگ، ارنا - بحیرہ عمان میں ایران، چین اور روس کے درمیان شروع ہونے والی مشترکہ سمندری مشق کے موقع پر چینی دفترخارجہ نے کہا ہے کہ یہ مشقیں تینوں ممالک کے درمیان فوجی تبادلے کے حوالے سے معمول کی بات ہے.

یہ بات جینگ شوانگ نے جمعہ کے روز صحافیوں کے ساتھ گفتگو کرتے ہوئے کہی.

انہوں نے کہا کہ خطے میں امن کے حصول کے مقصد سے ایسی مشقوں کا انعقاد معمول کی بات ہے

بحر ہند کے شمال میں ایران، روس اور چین کی مشترکہ سمندری مشق کا آغازہوگیا ہے یہ مشق 4 دن تک جاری رہے گی۔

چینی وزارت دفاع کے ترجمان 'ووکیان' نے اس مشترکہ مشق کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ عالمی امن کی حمایت اور سمندری سیکورٹی کے لیے اپنی نیک نیتی اور اپنی قابیلیتوں کو دکھانا کو اس مشترکہ مشق کے انعقاد کے مقاصد میں سے ایک قرار دیا۔

انہوں نے تینوں ممالک کی بحریہ کے مابین گہرے تبادلے اور باہمی تعاون کو اس مشق کا ایک اور مقصد قرار دیتے ہوئے مزید کہا کہ یہ مشق بین الاقوامی قوانین اور قواعد و ضوابط کے مطابق ہے.

انہوں نے مزید کہا کہ یہ مشق تینوں ممالک کے مابین معمول کے فوجی تبادلہ ہے اور اس کا خطے کی موجودہ صورتحال سے کوئی لینا دینا نہیں ہے۔

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
5 + 3 =