امریکہ عالمی معاہدوں کا غلط فائدہ اٹھارہا ہے: ایرانی وزیر خزانہ

تہران، ارنا - ایران کے وزیر خزانہ نے کہا ہے کہ امریکہ عالمی معاہدوں کا غلط فائدہ اٹھارہا ہے اور ہمیں یہ دیکھنا ہے کہ اس کی روک تھام کے لئے فنانشل ایکشن ٹاسک فورس (ایف اے ٹی ایف) کی ضمانت دے گی.

یہ بات "فرہاد دژپسند" نے پیر کے روز ایران میں تعینات یورپی اور ایشیائی سفیروں اور نمائندوں کے ساتھ ایک نشست سے خطاب کرتے ہوئے کہی.
انہوں نے کہا کہ ایران، ایف اے ٹی ایف کے ساتھ تعمیری اور شفاف تعاون کررہا ہے تاہم اس بات کی کیا گارنٹی ہے کہ امریکہ، بین الاقوامی معاہدوں کا غلط فائدہ نہ اٹھائے.
دژپسند نے کہا کہ امریکہ کے عالمی قوانین اور معاہدوں میں یک طرفہ اقدامات کی اقوام کے آزاد تجارت اور مالیاتی تبادلات کے لئے ایک بڑی رکاوٹ ہے.
انہوں نے ایران کی پیلیرمو اور سی ایف ٹی بین الاقوامی کنونشنوں میں شمولیت پر بعض غیر یقینی صورتحال کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ امریکہ عالمی جوہری معاہدے جو اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل نے اس کی تصدیق کی ہے، سے غیرقانونی علیحدہ ہوگیا.
انہوں نے مزید کہا کہ امریکی صدر نے عالمی حقوق سمیت، بین الاقوامی معیار بالخصوص ایف اے ٹی ایف کے معیاروں کے خلاف ایرانی قوم کے عالمی تجارتی اور مالیاتی تبادلوں اور ضروری سامان ادویات اور کھانے پر ظالمانہ پابندیاں عائد کی.
ایرانی وزیر خزانہ نے کہا کہ سیلاب اور زلزلے سے متاثرہ علاقوں میں امریکی پابندیاں دوسرے ممالک کے مالی امداد پہنچنے کو روک کردیا اور یہ سوال بین الاقوامی سطح پر اٹھانا ہوگا کہ کس طرح ایک ملک دوسرے ممالک میں تجارت اور مالی لین دین پر غیر قانونی پابندیاں عائد کرکے بچوں ، خواتین اور بوڑھوں کی موت کا سبب بن سکتا ہے۔
انہوں نے اس امید کا اظہار کیا کہ خودمختار ممالک کے درمیان باہمی تعاون کے ساتھ اسلامی جمہوریہ ایران فنانشل ایکشن ٹاسک فورس (ایف اے ٹی ایف) کی فہرست میں شامل ہوگا.
انہوں نے کہا کہ ایران کے منی لانڈرنگ اور دہشت گردی کی مالی اعانت سے نمٹنے کے لئے اقدامات اور ایف اے ٹی ایف کے ساتھ باہمی تعامل سنجیدہ طور پر توجہ مرکوز رکھ جانا چاہئیے اور امریکی غیرقانونی اقدامات کے خلاف ممالک کا عالمی معاہدوں پر اعتماد بحال ہونے کی ضرورت ہے۔
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
1 + 3 =