چابہار میں سرمایہ کاری افغانستان کی معاشی خوشحالی کیلئے سنہری موقع قرار

تہران، ارنا - بھارت کے نائب مشیر قومی سلامتی نے کہا ہے کہ چابہار بندرگاہ میں ایران اور بھارت کی مشترکہ سرمایہ کاری افغانستان کی معاشی خوشحالی کے لئے ایک سنہری موقع ہے.

یہ بات "راجیندر کانا" نے بدھ کے روز ایرانی دارالحکومت تہران میں منعقدہ دوسری علاقائی سلامتی کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہی.
اس موقع پر انہوں نے کہا کہ چابہار بندرگاہ میں اسلامی جمہوریہ ایران اور بھارت کے درمیان مشترکہ سرمایہ کاری افغانستان کی معیشت کی ترقی کے لئے ایک سنہری موقع ہے.
کانا نے کہا کہ افغانستان میں امن مذاکرات کو اس ملک کی قانونی حکومت کے زیر انتظام ہونا چاہیئے اور دوسرے ممالک اس راستے کی سہولیات کی فراہمی کے لئے کوشش کریں.
انہوں نے منشیات کی اسمگلنگ اور دہشتگردی کو تمام علاقائی ممالک کے لئے مشترکہ خطرہ قرار دیتے ہوئے کہا کہ موجودہ سیکورٹی دھمکیوں پر قابو پانا ان ممالک کے درمیان باہمی تعاون کے بغیر حاصل نہیں ہوگا.
بھارتی نائب مشیر قومی سلامتی نے افغانستان میں پراکسی دہشتگرد گروہوں کی موجودگی پر اپنی تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ پائیدار امن کے قیام کے لئے افغانستان میں استحکام اور سلامتی کے علاوہ کوئی اور مقصد رکھنے والے ممالک کے لئے کردار ادا کرنے کو روک کیا جانا چاہئے۔
انہوں نے کہا کہ افغانستان میں انتخابات کے انعقاد اور عوامی ووٹ قیام امن میں اہم کردار ادا کرے گا اور اس ملک میں دفاعی اور سیکورٹی فورسز کی ترقی عالمی برادری کی اہم ترجیح ہوجانا چاہئیے.
تفصیلات کے مطابق، دوسری علاقائی سلامتی کانفرنس کا بدھ کے روز ایرانی دارالحکومت تہران کی میزبانی میں انعقاد کیا گیا جس میں ایرانی حکام کے علاوہ بھارت، افغانستان، روس، چین، تاجکستان اور ازبکستان کی قومی سلامتی کے مشیروں نے شرکت کی.
اس ایک روزہ نشست میں افغانستان اور دہشتگردی کی مختلف قسم سے نمٹنے پر تبادلہ خیال کیا گیا.
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
4 + 2 =