ایران، بجلی بنانے کے 95 فیصد سازوسامان کو خود تیار کرتا ہے

سنندج، ارنا- ایرانی وزیر توانائی نے کہا ہے کہ اسلامی جمہوریہ ایران، بجلی کے ساز و سامان کی فراہمی میں 95 فیصد خودکفیل ہوگیا ہے جس سے سائنسی اور تحقیقاتی شعبوں میں ایرانی سائسندانوں اور انجینئروں کی اعلی صلاحیت ظاہر ہوتی ہے۔

ان خیالات کا اظہار "رضا اردکانیان" نے ملک کے جنوب مغربی صوبے کردستان میں سنندج فری ڈیم واٹر پمپنگ اسٹیشن کی افتتاحی تقریب کے موقع پر کیا۔

انہوں نے مزید کہا کہ ہماری کوشش یہ ہوگی کہ ہم سائنسی اور تحقیقاتی اداروں کے ساتھ تعاون کے ذریعے بجلی کے تمام سازو سامان کو اندروں ملک ہی تیار کریں گے۔

انہوں نے نکاسی آب اور آبپاشی کے نیٹ ورک کے شعبے میں قابل قدر کی ترقی پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ 2002ء تک ملک میں نکاسی آب اور آبپاشی کے نیٹ ورک قریب 1 لاکھ 671 ہزار ایکڑ کے رقبے پر پھیلے ہوئے ہیں۔

یہ بات قابل ذکر ہے کہ ایرانی وزیر توانائی نے حالیہ مہینوں کے دوران کہا تھا کہ رواں سال کے آخر تک ملک میں بجلی کی پیداواری صلاحیت میں3 ہزار میگاواٹ اضافہ ہوگا.

‎‎انہوں نے گزشتہ سال کے دوران ملک کے 12 صوبوں میں 15نئے پاور پلانٹس کے افتتاح کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ ہم روان سال کو بجلی کی پیداواری صلاحیت میں3 ہزار میگاواٹ اضافہ کر سکتے ہیں.

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
6 + 0 =