ایران اور عمان کے تعلقات مضبوط اور گہرے ہیں: عمان کے ڈپٹی اسپیکر

تہران، ارنا – عمان کے ڈپٹی اسپیکر نے کہا کہ ایران اور عمان کی حکومتوں، پارلیمنٹوں اور کاروباری عہدیداروں کے مابین تعلقات گہرے اور مضبوط ہیں۔

یہ بات عبداللہ العمری' آج بروز اتوار ترکی میں منعقدہ ایشیائی پارلیمانی اسمبلی (اے پی اے) کے 12ویں اجلاس کے موقع پر ایرانی اسپیکر 'علی لاریجانی' کے ساتھ ایک ملاقات کے دوران گفتگو کرتے ہوئے کہی.

انہوں نے ایران کے ساتھ معاشی تعاون کو فروغ دینے کے لئے عمانی حکام کے پختہ ارادے کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ اقتصادی معاملات میں ہم موثر اقدامات کرنے کی کوشش کر رہے ہیں اور ایرانی تاجروں کو معاشی اور آزاد تجارتی علاقوں میں حصہ لینے کا موقع فراہم کرتے ہیں.

عمانی عہدیدار نے سمندر کے راستے ایران سے عمان کو گیس کی منتقلی کے حوالے سے کہا کہ اس منصوبے کے نفاذ کے راستے میں کچھ تکنیکی اور معاشی مسائل موجود ہیں جو متعلقہ وزراء کی جد وجہد سے حل ہوسکتے ہیں۔

العمری نے کہا کہ ایران اور عمان کے درمیان روابط دیرینہ اور گہرے ہیں اور خطے میں حالیہ واقعات، عمان اور ایران  کے درمیان تعلقات کو متاثر نہیں کر سکتے ہیں.

ایرانی اسپیکر نے سمندر کے راستے سے عمان کو گیس کی منتقلی کے منصوبے پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ دونوں ممالک کے متعلقہ وزراء کو درپیش مسائل کے حل کے لیے سنجیدہ اقدامات کرنا چاہیے کیونکہ یہ اسٹریٹجک منصوبہ دونوں ممالک کے مفاد میں ہے۔

تفصیلات کے مطابق، ایرانی اسپیکر گزشتہ روز ایک پارلیمانی وفد کی قیادت میں ترکی میں منعقدہ ایشیائی پارلیمانی اسمبلی (اے پی اے) کے 12ویں اجلاس کی شرکت کے لیے ترکی روانہ ہوگئے.

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
9 + 1 =