ایران اور جاپان کے تعلقات کا فروغ ایرانی صدر کے دورے ٹوکیو کا اہم مقصد

تہران، ارنا – ایرانی وزارت خارجہ کے ترجمان نے کہا ہے کہ ایرانی صدر کے دورے ٹوکیو کا ایک اہم مقصد ایران اور جاپان کے مابین تعلقات کو بڑھانا ہے.

یہ بات سید عباس موسوی نے ہفتہ کے روز تبریز میں منعقدہ ایک پریس کانفرنس کے دوران گفتگو کرتے ہوئے کہی.

موسوی نے ڈاکٹر روحانی کے دورے ٹوکیو کو اہم قراردیتے ہوئےکہا  کہ جاپان مغربی ایشیاء کا ایک اہم ملک ہے اور ہمارے روابط اس ملک کے ساتھ بہت اچھے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ جاپان نے ایک دوست ملک کی حیثیت سے خطی ممالک کے مفادات کو یقینی بنانے اور کشیدگی کی کمی کے لیے نیک نیتی سے کچھ تجاویز پیش کی ہے جو امید ہے کہ صدر روحانی کے دورے ٹوکیو سے مطلوبہ نتائج حاصل ہو سکے.

٭٭ گیند امریکا کے کورٹ میں ہے

ایرانی ترجمان نے گزشتہ ہفتے میں ایران اور امریکہ کے درمیان قیدیوں کے تبادلے کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ امریکہ میں ایرانی قیدی کی رہائی کے بعد مسٹر ظریف نے اپنی ٹویٹ میں ایک پیکیج کے طور پر قیدیوں کے تبادلے کی تجویز کو پیش کرتے ہوئے کہا کہ ہم امریکی جیلوں میں تمام ایرانی محروسین کے تبادلے کے لیے تیار ہیں۔

ظریف کا کہنا ہے کہ گیند اب امریکا کے کورٹ میں ہے امریکہ کو اس حوالے سے فیصلہ کرنا ہوگا.
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
5 + 6 =