ایرانی سائنسدانوں نے دماغی طور پر معذور بچوں کا چلنا آسان کردیا

تہران، ارنا - ایران میں بہبود اور بحالی سائنسز یونیورسٹی کے سائنسدانوں نے ایک ایسی مشین تیار کی ہیں جس کی مدد سے دماغی طور پر معذور بچوں کا چلنا آسان ہوگا.

یہ بات ایرانی یونیورسٹی برائے سوشل ویلفیئر اور بحالی سائنس کے منیجر ڈاکٹر "سید علی حسینی" نے جمعہ کے روز ارنا نیوز ایجنسی کے ساتھ گفتگو کرتے ہو‏ئے کہی۔
انہوں نے چلنے سے قاصر رہنے کو دماغی فالج کے شکار بچوں کے اہم مسئلہ قرار دیتے ہوئے کہا کہ یہ آلہ ان بچوں کو چلنے کے غلط نمونوں سے بچنے کے لئے صحیح طور پر چلنا سکھاتا ہے۔
حسینی نے کہا کہ دماغی فالج کے پانچ شکار بچے ملکی وار آلے سے استعمال کر رہے ہیں۔
انہوں نے کہا کہ اس آلے کا استعمال دماغی فالج والے بچوں کے چلنے میں موثر ثابت ہوا ہے۔
انہوں نے کہا کہ یہ ایرانی آلہ غیر ملکیوں سے بہتر کارکردگی کا مظاہرہ کرتا ہے اور اس کے غیر ملکی نمونہ امریکہ میں موجود ہے مگر ہمارے مریضوں کے لئے زیادہ قیمت پر تیار کیا جاتا ہے۔
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
2 + 0 =