ایران میں پارلیمانی انتخابات کے لئے امیدواروں کی تعداد 13000 سے تجاوز کرگئی

تہران، ارنا - ایران کے مرکزی الیکشن آفیس کے ترجمان نے کہا ہے کہ ملک میں پارلیمانی انتخابات کے لئے 13896 امیدواروں نے اپنی نامزدگی کے کاغذات جمع کرائے ہیں اور اتوار کے دوپہر تک حتمی امیدواروں کا اعلان کیا جائے گا۔

یہ بات "سید اسماعیل موسوی" نے صحافیوں کے ساتھ گفتگو کرتے ہوئے کہی.
اس موقع پر انہوں نے کہا کہ امیدواروں کی فہرست میں 1605 خواتین اور 12291 مردوں بھی شامل ہیں.
موسوی نے کہا کہ امیدواروں کا 4 فیصد دینی مدارس ، 14 فیصد پی ایچ ڈی، 77 فیصد ایم اے اور دوسرے افراد بی اے سے تعلیم یافتہ ہیں.
انہوں نے مزید کہا کہ ان امیدواروں کے 4 فیصد اس سے پہلے ایرانی پارلیمنٹ کے نمائندے اور 23 فیصد بھی گزشتہ میں کم سے کم ایک بار کے لئے انتخابات کے لئے امیدوار تھے.
انہوں نے کہا کہ صوبے تہران میں 3138، اصفہان میں 1099، خراسان رضوی میں 980، خوزستان میں 800 اور فارس میں 739 امیدواروں نے اپنی نامزدگی کے کاغذات جمع کرائے ہیں.
ایران کے مرکزی الیکشن آفیس کے ترجمان نے ماہرین اسمبلی کے انتخابات کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ 57 امیدواروں نے اس دو دن میں اپنے ناموں کا اندراج کرلئے ہیں.
تفصیلات کے مطابق، اسلامی جمہوریہ ایران کے 11ویں پارلیمانی انتخابات میں حصے لینے والے امیدواروں کی رجسٹریشن کا 1 دسمبر کو ملک بھر میں آغاز کردیا گیا.
پارلیمانی انتخابات کے لئے 21 فروری کو اسلامی جمہوریہ ایران بھر میں ووٹ ڈالے جائیں گے.
ایرانی گارڈین کونسل اہل امیدوار کی اہلیت کا جائزہ کرکے امیدواروں کے حتمی ناموں کا اعلان کرے گی.
ایرانی پارلیمنٹ (مجلس) 290 نمائندوں کے شامل ہے جو عوام کے براہ راست ووٹ کے ساتھ 4 سال کے لئے منتخب کئے جاتے ہیں.
ایرانی پارلیمنٹ میں مختلف ادیان کے پیروکار سمیت عیسائیوں، آشوری، زرتشت اور یہودیوں کے پانچ نمائندے سرگرم عمل ہیں.
سنی مذہب نمائندے کوئی حد کے بغیر انتخابات میں فاتح ہونے کے ساتھ پارلیمنٹ کے نمائندوں کے شامل ہوسکتے ہیں.
فی الحال ایرانی 10ویں پارلیمنٹ میں 24 سنی نمائندے سرگرم عمل ہیں.
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے.IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
2 + 13 =