7 دسمبر، 2019 3:56 PM
Journalist ID: 1917
News Code: 83584685
0 Persons
ایران اور عالمی سیاحتی تنظیم کے تعاون کا فروغ

تہران، ارنا- عالمی سیاحتی تنظیم کے مشیر نے اس عزم کا اعادہ کیا ہے کہ ایران سے تعاون کے فروغ اور سیاحتی صنعت  کے حوالے سے ایک جامع منصوبے کو مرتب کرنے پر تیار ہے۔

انہوں نے ایران کیجانب سے سیاحتی صنعت کو ملک کی ترجیحات میں سر فہرست قرار دینے پر اپنی مسرت کا اظہار کردیا۔
ان خیالات کا اظہار "مارچلو نوتاریانی" نے ایرانی ادارہ برائے ثقافتی ورثے، دستکاری اور سیاحتی صنعت کے نائب سربراہ "ولی تیموری" کیساتھ ایک ملاقات میں گفتگو کرتے ہوئے کیا۔

اس موقع پر نوتاریانی نے کہا کہ انہوں نے دنیا کے 30 ممالک میں بحثیت سیاحتی صنعت کے مشیر کے فرائض سرانجام دی ہے۔

انہوں نے سیاحتی صنعت میں سرگرم تمام تنظیموں اور ارکان کے درمیان تعاون کی اہمیت کو اجاگر کرتے ہوئے کہا کہ وہ اس حوالے سے ایک جامع منصوبے کو مرتب کرنے کیلئے ضروری معلومات کو فراہم کر رہے ہیں۔

اس موقع پر ولی تیموری نے ایران میں سیاحتی صنعت کی اہمیت پر زور دیتے ہوئے اس امید کا اظہار کردیا کہ عالمی سیاحتی تنظیم کیساتھ تعاون کے ذریعے تعمیری اقدامات کریں گے۔

ایرانی ادارہ برائے ثقافتی ورثے، دستکاری اور سیاحتی صنعت کے نائب سربراہ نے سیاحتی صنعت کے فروغ سے متعلق ملک میں بے پناہ صلاحتیوں کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ سیاحتی صنعت کو تیل پر فوقیت حاصل ہونے امکان ہے۔

انہوں نے 7 ہزاروں سال پر پھیلی ہوئی ایران کی پرانی ثقافت اور ملک میں موسموں کے تنوع کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ ایران، دنیا بھر کے سیاحوں کی سب سے پہلی منزلوں میں سے ایک ہے۔

تیموری نے کہا کہ تاریخی اور قدرتی پرکشش مقامات کے ساتھ ساتھ  ہمارے ملک میں بہت سی تاریخی روایات اور رسومات ہیں جن میں سے ہر ایک کی اپنی دیسی ثقافت، وہاں کے خاص پگوان اور روایتی موسیقی ہوتے ہیں جو سیاحوں کو اپنی طرف راغب کردیتا ہے۔

انہوں نے کہا کہ گزشتہ سال کے دوران سپین میں ایرانی محکمہ ثقافت کے وزیر اور عالمی سیاحتی تنظیم کے سربراہ کی موجودگی میں ایران اور عالمی سیاحتی تنظیم کے درمیان تعاون کے ایک معاہدے پر دستخط کیا گیا۔

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
1 + 17 =