ایرانی فردو جوہری تنصیبات کی نئی سرگرمیوں کے منصوبے کو مکمل نفاذ کریں گے: روس

ماسکو، ارنا – نائب روسی وزیر خارجہ نے کہا ہے کہ ہم ایرانی فردو جوہری تنصیبات کی نئی سرگرمیوں کے منصوبے جسے اب تک معطل کردیا گیا، کو مکمل نفاذ کریں گے.

یہ بات "سرگئی ریابکوف" نے ہفتہ کے روز صحافیوں کے ساتھ گفتگو کرتے ہوئے کہی.
اس موقع پر انہوں نے کہا کہ فردو منصوبے پر ایک وقفہ لیا گیا تھا مگر اب ہم اس منصوبے کو نظر انداز نہیں کرکے اس پر پوری طرح عمل درآمد کریں گے.
ریابکوف نے کہا کہ روس کو نئے حالات سمیت ایران کی جانب سے فردو کے سنٹری فیوجز پر گیس انجیکشن لگانے اور 15 دسمبر کو امریکی نئی پابندیوں پر ردعمل کا اظہار کرنے کے لئے وقت کی ضرورت ہوگا.

جوہری معاہدے کے باقی رکن کا مقصد امریکی تباہ کن پالیسیوں کا مقابلہ کرنا ہے
انہوں نے مزید کہا کہ ہمیں یقین ہے کہ جوہری معاہدے کے باقی رکن ممالک کا مقصد امریکی تباہ کن پالیسیوں سے نمٹنا ہے.
نائب روسی وزیر خارجہ نے کہا کہ موجودہ وقت میں ، واشنگٹن کی تباہ کن پالیسیوں سے مقابلہ کرنے کے لئے جوہری فریقین کے درمیان ہم آہنگی بنانے کی ضرورت ہے.
تفصیلات کے مطابق، جوہری معاہدے کے مشترکہ کمیشن کے 14ویں اجلاس کا جمعہ کے روز ویانا میں انعقاد کیا گیا جس میں نائب ایرانی وزیر خارجہ برائے سیاسی امور "سید عباس عراقچی" نے شرکت کی.
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
7 + 1 =