کرغیزستان سے تعلقات بڑھانے پر کوئی حد مقرر نہیں: نائب ایرانی صدر

تہران، ارنا- سنیئر نائب ایرانی صدر نے کہا ہے کہ ایران اور کرغیزستان کے درمیان تعلقات کو بڑھانے پر کوئی حدد مقرر نہیں ہے اور باہمی تعلقات کے فروغ کیلئے دونوں ملکوں کے درمیان بے پناہ صلاحیتں ہیں۔

ان خیالات کا اظہار "اسحاق جہانگیری" نے بدھ کی رات کو کرغیزستان کے وزرائے نقل و حمل اور خزانہ کیساتھ ایک ملاقات میں گفتگو کرتے ہوئے کیا۔

انہوں نے ایران اور کرغیزستان کے درمیان معاشی تعاون کے مشترکہ کمیشن کے کامیاب انعقاد پر اپنی مسرت کا اظہار کرتے ہوئے اس امید کا اظہار کردیا کہ ان مشترکہ کمیشن سے دونوں ملکوں کے درمیان تعلقات کے فروغ کی راہ میں حائل رکاوٹیں دور ہوجائیں گی۔

نائب ایرانی صدر نے کہا کہ خوش قسمتی سے ایران – کرغیزستان تعلقات کی ترقی اور باہمی تعاون  کے فروغ کیلئے درکار قانونی دستاویزات مرتب اور منظوری دی گئی ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ یوریشین اقتصادی یونین معاہدے کے فریم ورک کے اندر دوطرفہ اور علاقائی تعلقات کی ترقی کیلئے ضروری فریم ورک مہیا کیا گیا ہے۔

جہانگیری نے تہران سے بیشکک کیلئے براہ براست پرواز کے قیام کیلئے دونوں ملکوں کے وزرا برائے سڑک اور شہری ترقی کے درمیان مفاہمت پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا ہے اس اقدام سے تاجروں کی آمد و رفت میں مزید آسانی آئے گی۔

نائب ایرانی صدر نے دونوں ملکوں کے درمیان تجارتی لین دین کیلئے مقامی کرنسی کے استعمال پر زور دیا۔

انہوں نے مختلف شعبوں بشمول سڑکوں، ڈیموں ارو بڑے صنعتی پلانٹوں کی تعمیر کیلئے ایران کی تکنیکی اور فنی صلاحیتوں پر تبصرہ کرتے ہوئے ٹرانسپورٹیشن اور ٹرانزٹ کے شعبے میں کرغیزستان سے تعان پر آمادگی کا اظہار کردیا ہے۔

اس موقع پر کرغیزستان کے وزیر برائے سڑک اور شہری ترقی نے اپنے ایرانی ہم منصب کیساتھ ملاقات کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ ان کے مذاکرات میں دونوں ملکوں نے باہمی تعلقات کے فروغ  سے اتفاق کیا ہے۔

انہوں نے یوریشین اقتصادی یونین میں ایران کی شمولیت پر خوشی کا اظہارکرتے ہوئے کرغیزستان کے سپورٹ اسٹڈیم کی تعمیر میں ایرانی تعاون پر شکریہ ادا کیا۔

اس موقع پر کرغیزستان کے وزیر خزانہ نے بھی کہا کہ ان کا ملک یوریشین اقتصادی یونین میں ایرانی کی شمولیت کی حمایت کرتا ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ دونوں ملکوں کے درمیان تعلقات کے فروغ کیلئے یوریشین اقتصادی یونین کی تمام صلاحیتوں سے فائدہ اٹھانا ہوگا۔

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
1 + 6 =