4 دسمبر، 2019 9:53 AM
Journalist ID: 2392
News Code: 83580135
1 Persons
ایران، آذربائیجان دو طرفہ تعلقات بڑھانے کیلئے پر عزم

تہران، ارنا – ایرانی صدر مملکت نے کہا ہے کہ اسلامی جمہوریہ ایران اور جمہوریہ آذربائیجان نے گزشتہ چھ سالوں کے دوران بڑھتے ہوئے تعلقات کو گہرانے کے لئے مناسب اقدامات اٹھائے ہیں.

یہ بات "حسن روحانی" نے منگل کے روز ایران کے دورے پر آئے ہوئے نائب آذری وزیر اعظم "شاہین مصطفی اوف" کے ساتھ ایک ملاقات کے دوران گفتگو کرتے ہوئے کہی.
انہوں نے آذری صدر "الہام علی اوف" کے تحریری پیغام کو موصول کرتے ہوئے کہا کہ بے شک دونوں ممالک کے اعلی سطحی وفد کے دوروں اور آذری صدر کے پیغام دو طرفہ تعلقات کو فروغ میں موثر ہوں گے.
صدر روحانی نے دونوں ممالک کے درمیان دیرینہ تعلقات کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ ہمیں امید ہے کہ آذری صدر کے ساتھ دستخط ہونے والے معاہدوں کا جلد نفاذ ہوں گے.
انہوں ںے مزید کہا کہ "خدا آفرین" ڈیم اور پاور پلانٹ کی تعمیر دونوں ممالک کے دوطرفہ تعلقات میں نئی تبدیلیوں کا باعث بنیں گی.
انہوں نے کہا کہ دونوں ممالک کے سرحدی علاقوں میں پاور پلانٹ کی تعمیر نہایت اہم ہے اور مشترکہ منصوبہ رشت آستار ریلوے لائن کی تعمیر کا جلد نفاذ ہوگا.
ایرانی صدر نے کہا کہ اسلامی جمہوریہ ایران مشترکہ منصوبے سمیت بحیرہ کیسپین میں تیل کی کھوج اور نکالنے کا سخت جائزہ لے رہا ہے.
انہوں نے دونوں ممالک کے درمیان تعلیمی اور ٹیکنالوجی تعلقات بڑھانے پر زور دیا اور کہا کہ ہم باکو کے ساتھ ٹیکنالوجی کے تمام شعبوں میں باہمی تعاون پر تیار ہیں اور مشترکہ انڈسٹری ٹاؤن قائم کرنا تعلقات کی توسیع دے سکتا ہے.
انہوں نے سیاحت اور ماحولیاتی مسائل کی اہمیت پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ ہمیں امید ہے کہ اسلامی جمہوریہ ایران اور جمہوریہ آذربائیجان کے درمیان بحیرہ کیسپین میں اس سلسلے میں باہمی تعاون کرنے کی ضرورت ہے.
انہوں نے کہا کہ ہم جمہوریہ آذربائیجان کے ساتھ ٹرانسپورٹ، تیل اور توانائی کے شعبوں میں باہمی تعلقات بڑھانا چاہتے ہیں.

2014 سے اب تک دونوں ممالک کے درمیان تجارتی تبادلات کا حجم تین گنا بڑھ چکا ہے
نائب آذری وزیر اعظم نے کہا کہ ہمارے صدر اسلامی جمہوریہ ایران کے ساتھ کثیرالجہتی تعلقات کو گھرانے کو قدر کی نگاہ سے دیکھ رہے ہیں.
مصطفی اوف نے کہا کہ آج تہران اور باکو کے درمیان تعلقات میں پیشرفت دیکھ جاتا ہے اور 2014 سے اب تک دونوں ممالک کے درمیان تجارتی تبادلات کا حجم تین گنا بڑھ چکا ہے اور گزشتہ سال کے دوران ہمارے ملک میں ایرانی کمپنیوں کی موجودگی میں 50 فیصد اضافہ دیکھنے میں آیا ہے.
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@
 

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
3 + 13 =