3 دسمبر، 2019 12:10 PM
Journalist ID: 2393
News Code: 83578849
0 Persons
جنگ بندی یمنی مسئلے کے حل کا پہلا قدم ہے: ایرانی اسپیکر

تہران، ارنا - ایرانی پارلیمنٹ کے اسپیکر نے کہا ہے کہ یمن میں جاری بحران کو حل کرنے کے لئے سب سے پہلے جنگ بندی ہونی چاہئے جس کے بعد دیگر معاملات کو دیکھا جاسکتا ہے.

یہ بات علی لاریجانی نے گزشتہ روز ایران کے دورے پر آئے ہوئے عمانی وزیر خارجہ ' یوسف بن علوی' کے ساتھ ایک ملاقات میں گفتگو کرتے ہوئے کہی.

انہوں نے مزید کہا کہ یمنی مسئلے میں بعض معاملات پوشیدہ ہیں.

انہوں نے خطے میں امن و آشتی پیدا کرنے میں عمان کا نمایان کردار کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ دونوں ممالک کے مابین تعلقات ہمیشہ اچھے رہے ہیں.

لاریجانی نے عمانی انتخابات کے انعقاد کو مبارکباد دیتے ہو‏ئے کہا خطے کے ممالک کو ایک دوسرے کے ساتھ مل کر مسائل کو حل کرنا ہوگا اور خطے میں شراکت اور امن کے فروغ کے لیے ایرانی منصوبہ بھی اسی سلسلے میں ہے۔

انہوں نے کہا کہ دوسرے فریق کو یہ جان لینا چاہیے کہ مسئلے کو طاقت اور غنڈہ گری کے ساتھ حل نہیں کیا جاسکتا ہےخاص طور پر یہ کہ یمن کے مسئلے کی پوشیدہ پرتیں ہیں تو پہلے جنگ بندی ہونی چاہیے پھر دوسرے مسائل حل کیا جائے.

انہوں نے کہا کہ عوام کو بخوبی علم ہیں کہ ٹرمپ ایران کے ساتھ دشمن ہے اور ایرانی تیل کی فروخت کو صفر کرنے کی امریکی کوشش ناکام ہوگئی ہے.

٭٭ایران خطے کا امن اڈہ ہے: یوسف بن علوی

اس موقع پر عمانی وزیر نے کہا کہ ہمیں خطے کے بحرانوں کو حل کرنے کے لیے موجودہ مواقع سے فائدہ اٹھانا ہوگا خاص طور پر یہ کہ ایران خطے کا امن اڈہ ہے.

انہوں نے کہا کہ ایران ہمیشہ دوسرے ممالک کو امن کی دعوت دے رہا ہے اور ہرمز امن منصوبے سے یہ بات ظاہر ہوتی ہے کہ ایران امن کا خواہاں ہے۔

یوسف بن علوی نے کہا کہ بے شک قیام امن میں ایک علمبردار ملک پر پابندیاں عائد کرنا ایک غیر قابل قبول کام ہے.

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
6 + 2 =