ایرانی کمپنیوں سے تعاون شامی ترجیحات میں سر فہرست ہے: شامی وزیر

تہران، ارنا- شامی وزیر برائے شہری ترقی نے اس عزم کا اعادہ کیا ہے کہ ان کا ملک ایرانی کمپنیوں کو ساری سہولیات کی فراہمی کرے گا  تا کہ وہ شام کی تعمیر نو میں تعاون کرکے شام میں سرمایہ کاری کے مواقع سے فائدہ اٹھا سکیں۔

ان خیالات کا اظہار "سہیل محمد لطیف" نے منگل کے روز ایرانی چیمبر آف کامرس میں منعقدہ شام ایران روس تجارتی کانفرنس کے موقع پر گفتگو کرتے ہوئے کیا۔

انہوں نے مزید کہا کہ ایران اور شام کے مشترکہ کمیشن میں طے پانے والے معاہدے کی شرایط میں سے ایک عملی اقدامات جیسے شام اور ایران کی مشترکہ کمپنیوں کا قیام ہے۔

عبداللطیف نے مزید کہا کہ اس معاہدے کے نفاذ ہونے کی صورت میں ہم شامی سرکاری کمپنیوں کی صلاحیتوں سے فائدہ اٹھا سکتے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ ایرانی نجی اور سرکاری کمپینوں کی صلاحیتیں، ایک دوسرے سے الگ ہیں اور ایران اور شام کی مشترکہ کمپنیوں کی تجویز پر عملی جامہ پہنانے کی صورت میں یہ کمپنیاں، شام کے تمام صوبوں میں سرگرم عمل ہوسکتی ہیں۔

شامی وزیر نے مزید کہا کہ ان کمپنیوں کو ٹیندر کی کاروائی میں شرکت کرنے کی ضرورت نہیں ہے اور وہ براہ راست اپنی سرگرمیوں کا آغاز کر سکتی ہیں۔

انہوں نے مزید کہا کہ اس کے علاوہ شام میں ایسی سرمایہ کاری کے مواقع ہیں جن میں ایرانی کمپنیاں حصہ لے سکتی ہیں۔

عبداللطیف نے کہا کہ مالی موضوعات اور ضمانت کیلئے دونوں فریقین کے درمیان باہمی مفاہمت کی ضرورت ہے کیونکہ باقی دیگر سرگرمیاں، بینکنک اور مالی معاہدوں اور لین دین سے منسلک ہیں۔

 شامی وزیر نے مزید کہا کہ دوسرا قدم، ایران اور شام کے درمیان مشترکہ بینک کا قیام ہے۔

انہوں نے ایران اور شام کے نجی شعبے کو تمام سرمایہ کاری منصوبوں میں اصل شریک قرار دیتے ہوئے شام کی تعمیر نو میں ایرانی کے نجی شعبے کی موجودگی پر زور دیا۔

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
3 + 5 =