جارحیت کرنے والوں کیخلاف یمنی قوم کی مزاحمت اور بہادری پر فخر ہے: صدر روحانی

تہران، ارنا- اسلامی جمہوریہ ایران کے صدر مملکت نے جارحیت کرنے والوں کیخلاف یمنی قوم کی مزاحمت اور بہادری کو سراہتے ہوئے اس عزم کا اعادہ کیا کہ ان کا ملک یمن میں قیام امن و استحکام اور یمنی مذاکرات میں پیشرفت کیلئے یمنی عوام کی بھر پور حمایت کرے گا۔

ان خیالات کا اظہار ڈاکٹر حسن روحانی نے اسلامی جمہوریہ ایران میں تعینات یمن کے نئے سفیر"ابراهیم محمد بن محمد الدیلمی" کیساتھ ایک ملاقات میں گفتگو کرتے ہوئے کیا۔

اس موقع پر یمنی سفیر نے صدر روحانی کو اپنی اسناد تقرری پیش کی۔

ایرانی صدر نے مزید کہا کہ حالیہ سالوں کے دوران، یمنی عوام نے بے پناہ مزاحمت کا مظاہرہ کیا اور ہمارے لیئے یمنی انقلابی حکام کا حوصلہ اور ان کا اظہار خیال انتہائی قابل فخر ہے۔

 صدر روحانی نے حالیہ برسوں میں یمنی مسلمان اور مظلوم عوام کی پریشانیوں کو ایرانی قوم کے خدشات میں سے ایک قرار دیتے ہوئے کہا کہ یمنی عوام کیخلاف جارحیت کرنے والوں اوران کے دشمنوں اور ساری دنیا نے اس نتیجے پر پہنچ چکے ہیں کہ وہ دباؤ اور جنگ کے ذریعے اپنے مقاصد کو حاصل نہیں کرسکتے ہیں جس سے یہ بات ظاہر ہوتی ہے کہ یمنی عوام کی مزاحمت نتیجہ خیر ثابت ہوگئی ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ اسلامی جمہوریہ ایران نے یمنی عوام کیساتھ سیاسی طور پر کھڑا ہے اور یمن پر حملے کے بعد ہی سے ان کیلئے انسانی امداد فراہم کی ہے۔

صدر روحانی نے اس بات پر زور دیا کہ بے شک یمنی عوام جارحیت کرنے والوں کیخلاف کامیابی حاصل کریں گے۔

انہوں نے کہا کہ اسلامی جمہوریہ ایران یمنی عوام اور ان کے انقلاب کو صحیح سمجھتا ہے اور جارحیت کرنے والوں کیخلاف ان کی مزاحمت کو بڑی اہمیت دیتا ہے اور اپنے مذہبی اور مذہبی فرائض کی بنا پر یمنی عوام کے ساتھ کھڑا رہے گا خواہ جارحیت کرنے والوں کیخلاف جدوجہد میں ہو یا مذاکرات میں۔

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
9 + 0 =