ایران اور کمبوڈیا کے درمیان باہمی تعاون کو بڑھانے کی بڑی صلاحیتیں ہیں: ایرانی صدر

تہران، ارنا- اسلامی جمہوریہ کے صدر مملکت نے کمبوڈیا سے تعلقات بڑھانے کا خیرمقدم کرتے ہوئے کہا کہ دونوں ملکوں کے درمیان اقتصادی اور تجارتی تعلقات کے فروغ کیلئے بے پناہ صلاحیتیں موجود ہیں جن کو بروئے کار لانا ہوگا۔

ان خیالات کا اظہار ڈاکٹر "حسن روحانی" نے منگل کے روز ایران میں تعینات کمبوڈیا کے نئے سفیر "اونگ سہ آن" کیساتھ ایک ملاقات میں گفتگو کرتے ہوئے کیا۔

اس موقع پر کمبوڈیا کے سفیر نے صدر روحانی کو اپنی اسناد تقرری پیش کی۔

ایرانی صدر نے دونوں ممالک کے اقتصادی تعلقات کے فروغ اور نجی شعبے میں باہمی تعلقات کی توسیع پر کمبوڈیا کیساتھ تعاون کیلئے آمادگی کا اظہار کردیا۔

انہوں نے مزید کہا کہ کمبوڈیا کو اسلامی جمہوریہ ایران اور جنوب مشرقی ایشیائی اقوام کی تنظیم "آسیان" کے درمیان تعلقات کے فروغ میں انتہائی اہم کردار حاصل ہے۔

دراین اثنا اسلامی جمہوریہ ایران میں تعینات کمبوڈیا کے نئے سفیر نے صدر روحانی کو اپنی اسناد تقرری پیش کرتے ہوئے دونوں ملکوں کے درمیان تجارتی تعلقات کی توسیع، سیاحت اور سرمایہ کاری کے شعبے میں بے پناہ صلاحتیوں کا ذکر کیا۔

انہوں نے دونوں ملکوں کے درمیان اقتصادی تعاون اور دوستی کو بہت گہرے اور تعمیری قرار دیتے ہوئے کہا کہ سیاسی، اقتصادی اور ثقافتی شعبوں میں باہمی تعلقات کے فروغ کیلئے کسی بھی کوشش سے دریغ نہیں کرنا چاہیے۔

وانگ سہ آن نے بین الاقوامی صفحے پر ایران اور کمبوڈیا کے مشترکہ مواقف پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ ان کا ملک اسلامی جمہوریہ ایران کے بین الاقوامی اور علاقائی مواقف کی حمایت کرتا ہے اور ایران کیساتھ دوستانہ تعلقات کے فروغ کا خواہاں ہے۔

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
1 + 4 =