جوہری معاہدے کے وعدوں میں کمی کا سلسلہ مفادات کی فراہمی تک جاری رہے گا: ایران

تہران، ارنا - اسلامی جمہوریہ ایران نے یہ واضح کردیا ہے کہ جوہری معاہدے سے متعلق وعدوں میں کمی لانے کا سلسلہ ایرانی مفادات کی مکمل فراہمی تک جاری رہے گا.

یہ بات نائب ایرانی وزریر خارجہ برائے سیاسی امور 'سید عباس عراقچی' جو 'ایران اور ہالینڈ کے سیاسی تعلقات' سے متعلق منعقدہ تیسری کانفرنس کی شرکت کے لیے دی ہیگ کے دورے پر ہے، نے گزشتہ روز ہالینڈی وزیر خارجہ 'اسٹیف بلاک' کے ساتھ ملاقات کے دوران گفتگو کرتے ہوئے کہی.
انہوں نے کہا ہے کہ جب تک ہمارے مفادات کو پورا نہ کیا جائے تب تک ایران، جوہری معاہدے میں اپنے وعدوں میں کمی کرتا رہے گا.
سید عباس عراقچی نے اس ملاقات میں جوہری معاہدے کی تازہ ترین پیشرفتوں کے ساتھ ساتھ دوطرفہ اور چند فریقی مسائل بشمول جوہری معاہدے ہرمز امن منصوبہ ، خلیج فارس اور بحیرہ احمر میں جہاز رانی کی سلامتی کے لیے تعلقات کو وسعت دینے کے طریقوں پر تبادلہ خیال کیا۔
عراقچی نے جوہری معاہدے سے متعلق یورپی فریقین کی وعدہ خلافی کی تنقید کرتے ہوئے کہا کہ اگریورپ جوہری معاہدے کو محفوظ رکھنا چاہتا ہے تو اسے اس سمجھوتے کی قیمت ادا کرنی ہوگی.
اس موقع میں ہالینڈی وزیر خارجہ نے ایک بار پھر ایٹمی معاہدے کو محفوظ رکھنے کی ضرورت پر زور دیتے ہوئے کہا کہ ہالینڈ، موجودہ بحران سے باہر نکلنے کے ایک حل کی تلاش کے لیے فرانسیسسی تجویز کی حمایت کرتا ہے۔
ہالینڈی عہدیدار نے خطے کے امن اور استحکام کو برقرار رکھنے کے لیے ایران کا اہم کردار کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ ہالینڈ خطے میں موجودہ کشیدگی اور تنا‎‎ؤ کی کمی کے لیے کوشاں ہے.
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@.

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
6 + 7 =