ایران کا چین کیساتھ تکنیکی شعبے میں تعاون کا مزید فروغ دینے کا اعلان

بیجنگ، ارنا - نائب ایرانی صدر برائے سائنسی اور تکنیکی امور نے کہا ہے کہ ہم امریکی پابندیوں کے باوجود چین کیساتھ تکنیکی تعلقات کو فروغ دینے کے لیے کوشاں ہیں.

یہ بات سورنا ستاری نے آج چین کے گلوبل ٹائمز اخبار کو انٹرویو دیتے ہوئے کہی.
انہوں نے کہا کہ ایران پابندیوں کی وجہ سے ٹیکنالوجی کے شعبے کو مستحکم اور ترقی دینے کی کوشش کر رہا ہے، اور اس سلسلے میں چین کے ساتھ تعاون کو مزید فروغ دینے پر غور کر رہا ہے۔
انہوں نے کہا کہ ایران کے خلاف امریکی پابندیاں عائد کرنا، کوئی نئی بات نہیں ہے بلکہ ان کی 40 سالہ تاریخ ہے تو ایران نے تیل اور توانائی پر توجہ دینے کی بجائے ٹیکنالوجی کے فروغ پر توجہ دینے کا فیصلہ کیا ہے۔
ستاری نے کہا کہ ہر چںد پابندیاں تعلقات کے فروغ کی راہ میں رکاوٹ ڈالتی ہیں لیکن ہم ایک موقع کی حیثیت سے تعلقات کی توسیع کیلیے ان پابندیوں کا فائدہ اٹھ سکتے ہیں.
انہوں نے کہا کہ ایران نے ٹیکنالوجی، نینو ٹیکنالوجی اور ہوا بازی کے شعبوں میں نمایاں پیشرفت کی ہے لہذا چین کے ساتھ وسیع تر تعاون کو بڑھانا چاہتا ہے۔
تفصیلات کے مطابق 'سورنا ستاری' ایک اعلی وفد کی قیادت میں چین کے جنوبی شہر شینزین میں منعقدہ ٹیکنالوجی نمائش (سی ایچ ٹی ایف) میں شرکت کے لیے اس ملک کے دورے پر ہے.
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@.

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
5 + 12 =