پاکستانی آرمی چیف کے ممکنہ دورہ ایران میں مغوی اہلکاروں کا مسئلہ اٹھایا جائے گا

مشہد، ارنا- سنیئر ایرانی کمانڈر نے کہا ہے کہ پاکستانی فوج کے سربراہ کے ممکنہ آئندہ دورہ ایران کے موقع پر باقی کے دو مغوی ایرانی بارڈر گارڈز کی بازیابی کا مسئلہ اٹھائے جائے گا.

ان خیالات کا اظہار بریگیڈئیر جنرل "محمد پاکپور" نے مشہد میں شہدا سے متعلق دسویں یادگار تقریب کے موقع پر صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔

انہوں نے کہا کہ باقی دو ایرانی مغوی اہلکاروں کی رہایی کیلئے کوششیں بدستور جاری ہیں اور ہم اس مسئلے کا تعاقب کرتے جار ہے ہیں۔

جنرل پاکپور نے مزید کہا کہ گزشتہ روز کے دوران بھی پاکستانی فوج کے عہدیداروں اور پاسداران اسلامی انقلاب کے قدس ہیڈ کوارٹر کے کمانڈرز کے درمیان ملاقات میں ان سے ایران کیساتھ باہمی تعاون کے ذریعے دہشتگرد کے ہاتھوں اغوا کیے گیے ایرانی اہلکاروں کی جلد ازجلد رہایی کا مطالبہ کیا۔

پاسداران اسلامی انقلاب کی بری افواج کے کمانڈر نے مزید کہا کہ مغوی ایرانی اہلکاروں کی رہایی، ہمارے پاکستانی بھائیوں کی زیادہ تر کوششوں سے وابستہ ہے۔

تفصیلات کے مطابق 15 اکتوبر کو پاک ایران سرحد کے قریب دہشتگردوں ںے انقلاب مخالف عناصر کے ساتھ مل کر ایران کے 14 سرحدی اہلکاروں کو اغوا کر لیا. ان اہلکاروں کو علی الصبح لولکدان کے سرحدی علاقے سے ایک دہشتگرد گروہ نے اغوا کیا۔

واضح رہے کہ ان مغوی اہلکاروں میں سے 12 کو بازیاب کردیا گیا ہے اور 2 اہلکار ابھی دہشتگرد عناصر کے ہاتھوں میں ہیں۔

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
2 + 1 =