دنیا کیساتھ تعامل چاہتے ہیں مگر ذلت کو قبول نہیں کریں گے: ایرانی صدر

یزد، ارنا – ایران کے صدر مملکت نے کہا ہے کہ ہم عوام کے مسائل کے حل یا کمی کے لئے دنیا کے ساتھ تعامل اور مذاکرات چاہتے ہیں مگر ذلت کو قبول نہیں کریں گے.

یہ بات "حسن روحانی" نے اتوار کے روز ایرانی صوبے یزد کے دورے کے موقع پر انتظامی کونسل کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہی.
اس موقع پر انہوں نے کہا کہ ہم ملک کے صدر کے طور پر ہمارے عوام کے مسائل کو برداشت نہیں کرسکتے ہیں لہذا اب تمام دنیا کے ساتھ گفتگو کرکے مناسب حل کی دستیابی کے لئے کوشش کر رہے ہیں.
صدر روحانی نے کہا کہ ہم عوام کے وقار اور اتحاد کے تحفظ کے ساتھ مناسب حل کی تلاش میں ہیں، ہمیں مسائل پر قابو پانے کے لئے ایک دوسرے کے ساتھ قومی وسائل سے بہتر استعمال کرنا ہوگا.
انہوں نے ایران اور یوریشین یونین کے ساتھ باہمی تعاون کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ اس باہمی تعلقات کا مقصد تجارت اور برآمدات کی سہولتوں کی فراہمی ہے.
انہوں نے ملک میں سیاحت کی ترقی پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ کسی بھی ملک کے ساتھ ویزے کی منسوخی غیر ملکی سیاحوں کی تعداد میں اضافہ اور سیاحت کی ترقی کا باعث بنے گی۔
ایرانی صدر نے سیاحت کی ترقی کے لئے سرمایہ کاری اور مخصوص بجٹ کی فراہمی پر زور دیا.
یاد رہے کہ صدر مملکت حسن روحانی نے گزشتہ روز ایرانی صوبے یزد کا دورہ کیا اور آج صوبے کرمان کے دورے پر ہیں.
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
2 + 3 =