10 نومبر، 2019 9:36 AM
Journalist ID: 2392
News Code: 83548193
1 Persons
ایران جوہری معاہدے کے فریم ورک میں عمل کر رہا ہے: صالحی

بوشہر، ارنا – ایرانی ایٹمی توانائی ادارے کے سربراہ نے اس بات پر زور دیا ہے کہ اسلامی جمہوریہ ایران جوہری معاہدے کے مطابق عمل کرتا ہے اور انجام ہونے والے اقدامات اس معاہدے کی شق نمبر 26 کی مبنی پر ہے.

یہ بات "علی اکبر صالحی" نے ہفتہ کے روز ایرانی جنوبی شہر بوشہر کے ائیرپورٹ میں صحافیوں کے ساتھ گفتگو کرتے ہوئے کہی.

انہوں نے کہا کہ جوہری معاہدے کی شق نمبر 26 کے مطابق، اگر ہمارے فریقین اپنے وعدوں پر قائم نہ رہیں تو توازن رکھنے کے لئے ہم اپنے وعدوں میں کمی لا سکتے ہیں.
صالحی نے کہا کہ مختصر وقت میں ملکی افزودگی کی صلاحیت میں 3500 SWU اضافہ دیکھنے میں آیا ہے جو ہماری کامیابیوں کی علامت ہے.
انہوں نے مزید کہا کہ ہمیں امید ہے کہ ہمارے فریقین اپنے وعدوں پر عمل کریں جس کی صورت میں ہمارے اقدامات قابل واپسی ہوں گے، صدر روحانی کے مطابق، اگر وہ اپنے وعدوں پر قائم رہیں تو ہم اپنے وعدوں پر واپس آئیں گے.
ایرانی ایٹمی توانائی ادارے کے سربراہ نے کہا کہ آج بوشہر پاور پلانٹ کے یونٹ 2 کے ٹھوس سازی کا آغاز کیا گیا اور قریب مستقبل میں تین یونٹ کی تعمیر کی جائیں گی.
نائب ایرانی صدر نے کہا کہ 2016 کو ہم نے روس کے ساتھ دو نئی پاور پلانٹ کی تعمیر کے معاہدے پر دستخط کردئے جو ہر ایک کی صلاحیت 1050 میگاواٹ ہے.
انہوں نے کہا کہ ہمیں امید ہے کہ آئندہ چھ سال تک ری اکٹیر 2 اور آٹھ سال تک ری ایکٹر 3 کو استحصال کریں گے.
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
3 + 11 =