پاکستان سے تعلقات بڑھانے پر کوئی حد مقرر نہیں ہے: ایرانی وزیر صنعت

تہران، ارنا- ایرانی وزیر برائے صنعت، تجارت اور کان کنی نے کہا ہے کہ اسلامی جمہوریہ ایران اور پاکستان کے درمیان تعلقات بڑھانے پر کوئی حد مقرر نہیں ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ ایران اور پاکستان، تمام بین الاقوامی حلقوں اور مختلف شعبوں میں ہمیشہ ایک دوسرے کے حامی رہے ہیں اور ان کی تکمیلی معیشتوں کے ساتھ ساتھ  دونوں ملکوں کے درمیان مذہبی اور ثقافتی مشترکات بھی ہیں.

ان خیالات کا اظہار "رضا رحمانی" نے ہفتہ کے روز ایران اور پاکستان کے پارلیمانی فرینڈ شپ گروپ کے سربراہ اور ارکین کیساتھ ایک ملاقات میں گفتگو کرتے ہوئے کیا۔

رحمانی نے مزید کہا کہ اسلامی جمہوریہ ایران، پاکستان کے ساتھ اپنے برادرانہ تعلقات کو ایک اسٹریٹجک اور گہرے تعلقات کی حیثیت سے دیکھتا ہے۔

انہوں نے مشترکہ مفادات کی فراہمی کے حوالے سے باہمی تعلقات کو بڑھانے اور اس سلسلے میں موجودہ صلاحیتوں کو بروئے کار لانے پر زور دیا۔

ایرانی وزیر صنعت نے اپنے حالیہ دورہ پاکستان اور پاکستانی وزیراعظم عمران خان سے ملاقات پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ وزیر اعظم پاکستان، دونوں ممالک کے تجارتی تعلقات کو بہت بڑی اہمیت دیتے ہیں اور اس حوالے سے کئی طرح سے منصوبہ بندیاں بھی کی گئی ہیں جن کو سنجیدگی سے تعاقب کیا جاتا ہے۔

رحمانی کا کہنا ہے کہ ایرانی حکومت کے اعلی حکام نے بھی پاکستان کے ساتھ تعلقات کے فروغ پر زور دیا ہے۔

انہوں نے اس امید کا اظہار کردیا کہ پاک ایران پارلیمانی فرینڈ شپ گروپ کے فعال ہونے سے دونوں ملکوں کے تجارتی تعلقات کی راہ میں حائل رکاوٹوں کو دور کرکے پاکستان اور ایران کے تجارتی تعلقات میں مزید اضافہ ہوجائے گا۔

ایرانی وزیر صنعت نے دونون ملکوں کے درمیان بینکنک مسائل کا ذکر کرتے ہوئے باہمی تعاون کی توسیع کیلئے ان مسائل کے حل کی ضروت پر زور دیا۔

انہوں نے اس امید کا اظہار کردیا کہ آئندہ مہینوں کے دوران ایران اور پاکستان کے درمیان آزاد تجارتی مذاکرات کو حتمی شکل دیا جائے گا۔

انہوں نے دونوں ملکوں کے درمیان باضابطہ طور پر سرحدی گیٹوں کے قیام پر بات چیت ہوئی ہے اور اسلام آباد اور تہران نے ان سرحدی علاقوں میں بنیادی ڈھانچے کی فراہمی میں تیزی لانے سے اتفاق کیا ہے۔

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
2 + 10 =