روس نے آبنائے ہرمز کی سلامتی سے متعلق ایرانی تجویز کی حمایت کردی

ماسکو، ارنا - نائب روسی وزیر خارجہ نے کہا ہے کہ ان کا ملک آبنائے ہرمز کی سلامتی سے متعلق اسلامی جمہوریہ ایران کے پیش کردہ ہرمز امن منصوبے کی حمایت کرتا ہے.

یہ بات "سرگئی ریابکوف" نے جمعہ کے روز ارنا نیوز ایجنسی کے ساتھ گفتگو کرتے ہوئے کہی۔
اس موقع پر انہوں نے کہا کہ ایران کا منصوبہ تمام علاقائی ممالک پر شامل ہو رہا ہے اور روس علاقائی ممالک کے حکام کے ساتھ خلیج فارس کی سیکورٹی کے لئے اپنے منصوبوں پر مذاکرات کر رہا ہے۔
تفصیلات کے مطابق، روس نے خلیج فارس میں تنازعات کی کمی کے لئے اپنے امن منصوبے کو پیش کردیا ہے جس کا اصلی مقصد سلامتی کونسل کی مسلسل نگرانی اور ہمسایہ ممالک کی شراکت داری کے ساتھ سیکورٹی تنظیم قائم کرنا اور اس خطے سے غیرعلاقائی فوجیوں کو باہر نکلنا ہے۔
روس کے امن منصوبہ خلیج فارس کے اندرونی مسائل میں غیرعلاقائی ممالک کی عدم مداخلت پر زور دے رہا ہے اور ایرانی صدر مملکت "حسن روحانی" کے ہرمز امن منصوبے کی طرح ہے۔
ایرانی حکومت کے ترجمان علی ربیعی نے 4 نومبر کو اپنی پریس کانفرنس میں ایرانی صدر کیجانب سے سعودی عرب اور بحرین کے بادشاہوں کے نام میں بھیجے گئے خط کے حوالے سے کہا کہ صدر روحانی کا اس اقدام، خطے میں قیام امن و استحکام سے متعلق اسلامی جمہوریہ ایران کے تعمیری موقف کے سلسلے میں ہے۔
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
8 + 5 =