ہمارا منصوبہ جوہری معاہدے کا خاتمہ نہیں: اعلی ایرانی عہدیدار

بوشہر، ارنا - ایران کے صدارتی چیف آف اسٹاف نے کہا ہے کہ جوہری معاہدے کو ختم کرنا ہمارا مقصد نہیں بلکہ ہم ایسا قدم اٹھانا چاہتے ہیں جس میں ایرانی قوم کی عزت کی بالادستی ہو.

"محمود واعظی" نے کہا کہ جوہری وعدوں کی کمی کے چوتھے مرحلے میں فردو جوہری تنصیبات میں 1044 سینٹری فیوجز میں گیس انجکشن کا آغاز کیا گیا اور چین اور روس بھی ایران کی حمایت کرتے ہیں۔
انہوں نے کہا کہ چین اور روس نے اعلان کردیا کہ اسلامی جمہوریہ ایران واحد ملک ہے جو اپنے وعدوں پر قائم ہے مگر دوسرے فریقین اپنے وعدوں کے مطابق عمل نہیں کرتے ہیں اور یہ قابل قبول نہیں ہے۔
انہوں نے کہا کہ یورپی حکام چوتھے مرحلے کے آغاز پر پریشانی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ ایران عالمی جوہری معاہدے سے علیحدہ ہوگا۔
ایرانی صدارتی چیف آف اسٹاف نے کہا کہ فردو جوہری تنصیبات میں ہونے والے اقدامات قابل واپسی ہے اور اگر 1+5 کے ممالک 2017 کو طے پانے والے معاہدے پر واپس آئیں ہم بھی چوتھے مرحلے سے واپس آئیں گے۔
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
4 + 7 =