کل سے جوہری وعدوں میں کمی لانے کے چوتھے مرحلے کا آغاز کریں گے: ایرانی صدر

تہران، ارنا – ایران کے صدر مملکت نے کہا ہے کہ بدھ کے روز جوہری وعدوں میں کمی لانے کے چوتھے مرحلے اور فردو جوہری تنصیبات میں موجودہ سنٹری فیوجز میں گیس انجیکشن کےعمل کا آغاز کیا جائے گا.

 ان خیالات کا اظہار "حسن روحانی" نے منگل کے روز ایرانی آزادی نامی انوویشن فیکٹری کی افتتاحی تقریب میں خطاب کرتے ہوئے کیا.

انہوں نے کہا کہ ہم کل سے جوہری وعدوں کی کمی لانے کے چوتھے مرحلے کا آغاز کریں گے البتہ دوست ممالک جاں لیں کہ عالمی ایٹمی توانائی ایجنسی ہماری نئی سرگرمیوں پر نگرانی کرے گی.

روحانی نے کہا کہ چوتھا مرحلہ بھی دوسرے مرحلوں کی طرح قابل واپسی ہے، جب دوسرے فریقین اپنے وعدوں پر عمل کریں تو ہم بھی اپنے وعدوں پر مکمل واپس آئیں گے.

انہوں نے مزید کہا کہ اگر وہ 2017 کے یکم جنوری پر واپس آئے ہم بھی اس تاریخ پر واپس آئیں گے.

انہوں نے کہا کہ فردو جوہری تنصیبات میں بدھ کے روز ہمارے چوتھے مرحلے کا آغاز کیا جائے گا اور جوہری معاہدے کے مطابق، فردو میں 1044 سنٹری فیوجز موجود ہیں اور اس معاہدے کے مطابق، وہ مڑیں مگر ان پر گیس انجیکشن کا عمل نہ کیا جائے، مگر ہم آج ایرانی ایٹمی توانائی ادارے کا حکم دے ہیں کہ کل سے ان پر گیس انجیکشن کے عمل کا آغاز کرے.

ایرانی صدر نے کہا کہ ہم جانتے ہیں کہ وہ ہمارے اس عمل پر ناراض ہیں مگر جب وہ اپنے وعدوں پر واپس آئے تو ہم گیس انجیکشن کو منقطع کریں گے.

انہوں نے اس بات پر زور دیا کہ ہم ایک فریقی طور پر اپنے وعدوں پر عمل نہیں کریں گے مگر ان ممالک کے ساتھ کئے گئے تمام مذاکرات پر قائم ہیں اور ان کو جاری رکھیں گے.

روحانی نے کہا کہ البتہ دوسرے فریقین نے مناسب نتیجہ حاصل ہونے کے لئے کوشش کیں مگر حالیہ ہفتوں کے دوران بعض مسائل پر اتفاق نہیں کیا گیا لہذا ہم کل سے جوہری وعدوں کی کمی لانے کے چوتھے مرحلے کا آغاز کریں گے.

انہوں نے کہا کہ اگلے دو مہینے کے دوران مذاکرات کا موقع موجود ہے اور ایک بار پھر مذاکرات کریں گے، اگر پابندیوں کے خاتمے، تیل کی فروخت، بینکنگ میں پیسے سے استعمال، انشورنس اور  دہاتیں کی پابندیوں کے خاتمے کے لئے مناسب حل کو حاصل کریں تو ہم اپنے وعدوں پر واپس آئیں گے.

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
2 + 1 =