ایرانی اور ترک سائنسدانوں کو "مصطفی (ص)" ایوارڈ سے نوازا کیا جائے گا

تہران، ارنا - مصطفی (ص) ایوارڈ کے سائنسی ورکشاپ کے سکریٹری نے کہا ہے کہ اسلامی جمہوریہ ایران اور ترکی کے پانچ سائنسدانوں کو نشان مصطفی (ص) کے تیسرے مرحلے کے ایوارڈز سے نوازا کیا جائے گا.

یہ بات 'حسن ظہور' نے ہفتہ کے روز 'مصطفی (ص) ایوارڈ' سے متعلقہ ایک منعقدہ پریس کانفرنس میں خطاب کرتے ہوئے کہی.
انہوں ںے کہا کہ اس ایوارڈ کو انفارمیشن ٹیکنالوجی ، بائیوٹیک اور نانو ٹیکنالوجی کے خصوصی شعبے اور دو عام شعبوں میں عطا کیا جائے گا.
ظہور نے کہا کہ اسلامی دنیا کے 512 سائنسدان اور 202 تعلیمی مراکز کے امیدواروں نے اپنے کاموں کو اس سیکرٹریٹ میں بھیجا.
انہوں نے کہا کہ سائنس اور ٹیکنالوجی کے شعبوں میں سب سے بہترین آثار اس ایوارڈ کو حاصل کر سکتے ہیں اور نشان مصطفی میں حصہ لینے والوں کو ایک اسلامی ممالک کی شہریت اور قومیت کا شامل ہونا چاہیئے.
مصطفی ایوارڈ کے تیسرے مرحلے کی تقریب کا 11 نومبر کو انعقاد کیا جائے گا.

مصطفی (ص) ايوارڈ کو عطا کرنے کا مقصد مختلف سطحوں اور رجحانات پر سائنسی واقعات کا جائزہ لينا، اسلامی دنيا ميں معروف سائنسدانوں، مشہور اسلامی شخصيات کی تعريف کرنا اور سائنسی تعاون کے راستوں کی سہولتيں فراہم کرنا ہے.
تفصيلات کے مطابق نشان مصطفی (ص) اسلامی دنيا کی سائنس اور ٹيکنالوجی کا سب سے بڑا اعزاز ہے جو ہر دوسال ميں اسلامی دنيا کے بہترين سائنسدانوں اور علماء کو عطا کيا جاتا ہے.
ہميں اس ٹوئٹر لينک پر فالو کيجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
1 + 4 =