ظریف کا یمنی سویلین کے قتل عام اور ناکہ بندی کی روک تھام کا مطالبہ

 تہران، ارنا- ایرانی وزیر خارجہ نے یمن کیخلاف مسلط کردہ جنگ کی ابتر حالات اور 5 سالوں کی ناکہ بندی پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے یمنی سویلین کے قتل عام اور ناکہ بندی کی روک تھام کا مطالبہ کیا۔

ان خیالات کا اظہار "محمد جواد ظریف" نے ایران کے دورے پر آئے ہوئے یمن کی مزاحمتی تنظیم انصاراللہ کے اسپیکر "محمد عبدالسلام" کیساتھ ایک ملاقات میں گفتگو کرتے ہوئے کیا۔

انہوں نے یمن کیخلاف مسلط کردہ جنگ کی وجہ سے رونما ہونے والی ابتر صورتحال پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے یمن میں 5 سالوں کی ناکہ بندی اور سویلین کے قتل عام کی روک تھام کا مطالبہ کیا۔

 ظریف نے یمنی بحران کے حل کیلئے مذاکرات اور سیاسی طریقوں پر زور دیتے ہوئے یمن میں ناکہ بندی اور یمنی فریقین کے درمیان مذاکرات کی حمایت پر زور دیا۔

انہوں نے اسلامی جمہوریہ ایران کیجانب سے ایک بار پھر یمن میں انسانہ دوستانہ امداد کی ترسیل پر آمادگی کا اظہار کردیا۔

اس موقع پر یمنی تحریک انصاراللہ کے اسپیکر نے بھی اسلامی جمہوریہ ایران کیجانب سے یمنی عوام کی حمایت پر شکریہ ادا کرتے ہوئے یمن کی تازہ تر ین صورتحال سمیت یمنی بحران کے سیاسی اور وہاں کی انسانی صورتحال کے حوالے سے ایرانی وزیر خارجہ کو وضاحتیں پیش کی۔

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
2 + 11 =