فسلطینیوں کیخلاف صہیونی جرائم میں ٹرمپ بھی برابر کے شریک ہیں: ظریف

تہران، ارنا- اسلامی جمہوریہ ایران کے وزیر خارجہ نے کہا کہ امریکہ کیجانب سے انتہا پسندی اور یکطرفہ پالیسی کے تعاقب سمیت عالمی قوانین کی توہین بھی، فلسطینی عوام پر تباہ کن اثر پڑا ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ بحثیت مشرق وسطی کے ایک بنیادی مسئلہ یعنی مسئلہ فلسطین کی اہمیت کو کم کرنے کی صہیونی درخواست میں ٹرمپ کی توسیع پسندانہ انتظامیہ بھی برابر کے شریک ہے۔

ان خیالات کا اظہار "محمد جواد ظریف" نے باکو میں منعقدہ غیر وابستہ ممالک کی تحریک کے اجلاس کی سائڈ لائن میں فلسطین کمیٹی کے وزرا کے اجلاس میں گفتگو کرتے ہوئے کیا۔

انہوں نے فلسطینی عوام کے حالیہ ابتر صورتحال کے پیش نظر ان جیسے اجلاسوں کے انعقاد کو انتہائی اہم قرار دے دیا۔

ایرانی وزیر خارجہ نے کہا کہ امریکہ کیجانب سے خطی ممالک کے درمیان افرتفری پھیلانے اور جنگ کی آتش بھڑکانے سمیت ایران جوہری جیسے موضوعات پر توجہ دینے کی اصل وجہ فلسطینی عوام کے مسائل میں اضافہ کرنے اور ان پر مزید نقصان پہنچنے کی ہے۔

 انہوں نے مزید کہا کہ سب سے بڑی افسوس کی بات ہے کہ بعض علاقائی ممالک اس حوالے سے امریکہ کی چال میں پھنستے ہوئے امریکہ اور ناجائز صہیونی کے نقش قدم پر چل رہے ہیں۔

ظریف نے مزید کہا کہ  لیکن یہاں سب سے اہم بات وہی غیر وابستہ تحریک کے رکن ممالک کے درمیان یکجہتی اور اتحاد کا تحفظ ہے تا کہ دنیا  کو فلسطین جیسے اہم مسئلے سے توجہ ہٹانے کیلئے صہیونی اقدامات کو عملی جامہ پہننانے کی اجازت نہ دیں۔

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
captcha