اربعین پیدل مارچ، قومی یکجہتی اور اتحاد کا بہترین موقع ہے: صدر روحانی

 تہران، ارنا- اسلامی جمہوریہ ایران کے صدر ممکلت نے کہا ہے کہ خوش قسمتی سے حالیہ برسوں میں اربعین مارچ کی روایت ایک اہم واقعہ، ایک شاندار مہاکاوی اور مسلمانوں اور شیعوں کے اتحاد کی علامت بن چکی ہے۔

ان خیالات کا اظہار ڈاکٹر "حسن روحانی" نے منگل کے روز ثقافتی انقلاب کی سپریم کونسل کے اجلاس میں گفتگو کرتے ہوئے کیا۔

اس موقع پر ایرانی وزیر داخلہ "عبدالرضا رحمانی فضلی" نے صدر ممکلت کو اربعین پیدل مارچ تقریب کے انعقاد سے متعلق رپورٹ کو پیش کی۔

ایرانی صدر نے اربعین پیدل مارچ کے روحانی اثرات کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ اس تقریب میں شریک لاکھوں زائرین، جن میں تین لاکھ سے زائد ایرانی زائرین بھی موجود تھے، سے دین، اہل بیت اور بالخصوص حضرت امام حسین علیہ السلام سے لوگوں کی بے پناہ محبت اور عقیدت ظاہر ہوتی ہے۔

انہوں نے اس شاندار تقریب کے سیاسی اثرات کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ اربعین پیدل مارچ کے ثقافتی اور تہذیبی اثرات کے ساتھ ساتھ ہمیں اس عظیم تقریب کے سیاسی اثرات بھی نظر آتے ہیں اور ان میں سے ایک یہ ہے کہ ایک ایسے وقت جب دشمن ہمارے خطے میں بدامنی اورعدم استحکام پھیلانا چاہتا ہے تو اسی وقت لاکھوں زائرین بھر پور سکون اور امن میں اربعین پیدل مارچ میں حصہ لیتے ہیں۔

 صدر روحانی نے اس عظیم اجتماع میں شرکت کرنے والے افراد کے تنوع اور کثیریت پر زور دیتے ہوئے کہا کہ امام حسین علیہ السلام سے خراج عقیدت پیش کرنے والے زائرین نے ہر کسی قومیت اور قبیلے سے اس تقریب میں حصہ لیا ہے یہاں تک کہ ان زائرین میں غیر شعیہ لوگ بھی موجود تھے۔

ایرانی صدر نے کہا کہ دنیا نے اربعین پیدل مارچ کے موقع پر حضرت امام حسین علیہ السلام کے پیروکاروں اور آپ (ع) سے محبت کرنے والوں کے درمیان گہرے بندھن اور اتحاد کا مشاہدہ کیا۔

اسلامی جمہوریہ ایران کے صدر ممکلت نے کہا ہے کہ خوش قسمتی سے حالیہ برسوں میں اربعین مارچ کی روایت ایک اہم واقعہ، ایک شاندار مہاکاوی اور مسلمانوں اور شیعوں کے اتحاد کی علامت بن چکی ہے۔

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
1 + 4 =