حکومت نے ایف اے ٹی ایف کے ضوابط کی منظوری دے دی: ایرانی وزیر داخلہ

تہران، ارنا – ایرانی وزیر داخلہ نے ادارے فنانشل ایکشن ٹاسک فورس (FATF)کے قوائد و ضوابط کی منظوری دے دی ہے.

یہ بات عبدالرضا رحمانی فضلی نے پیر کے روز ایک خصوصی نشست سے خطاب کرتے ہوئے کہی.

انہوں نے کہا کہ ہمارے پاس چار مہینے باقی ہیں جس چار مہینے کے دوران حکومت کو چار بلوں اور دو کنونشنوں کی منظوری لینی چاہیے.

انہوں نے مزید بتایا کہ ہم نے ایف اے ٹی ایف کے ضوابط کی منظوری کے لیے بڑے اقدامات اٹھائے ہیں.

یاد رہے کہ ایرانی وزیر خارجہ نے گزشتہ روز کہا کہ اسلامی جمہوریہ ایران اپنے اندورنی قوانین کی مبنی پر منی لانڈرنگ سے مقابلہ کرنے کو ایک مقصد اور ضرورت کے طور پر پیچھا کر رہا ہے اور ادارے فنانشل ایکشن ٹاسک فورس (FATF)کا فیصلہ بالکل بالکل ہے جس سے مخالف ہیں.

انہوں نے اسلامی جمہوریہ ایران پر ایف اے ٹی ایف کے انتباہ کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ ہمارا ملک منی لانڈرنگ سے مقابلہ کرنے کو ایک مقصد اور ضرورت کے طور پر پیچھا کر رہا ہے.

تفصیلات کے مطابق، فرانس میں ہونے والے فائننشل ایکشن ٹاسک فورس (FATF) نے اس بات پر انتباہ کیا کہ اگر اسلامی جمہوریہ ایران اگلے تین مہینوں تک منظم جرائم کی روک تھام (پلیرمو) اور دہشتگردی مالی حمایت کی کنونشن کو منظور نہ کرے تو اس ملک کے خلاف اقدامات اٹھائے جائیں گے اور ایران کی صورتحال 2017 کے جون کی طرح ہوجائے گی.
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
2 + 9 =