21 اکتوبر، 2019 4:52 PM
Journalist ID: 1917
News Code: 83525619
0 Persons
 ایران اور روس کا شام اور خیلج فارس پر تبادلہ خیال

ماسکو، ارنا-  روس میں تعینات اسلامی جمہوریہ ایران کے سفیر اور روسی صدر کے نمائندہ برائے مشرق وسطی اور شمالی افریقہ نے ایک ملاقات میں علاقے کی تازہ ترین تبدیلیوں بشمول شام اور خلیج فارس پر تبادلہ خیال کیا۔

تفصیلات کے مطابق "مہدی سنائی" اور "میخائیل باگدانف" نے پیر کے روز ایک ملاقات میں باہمی دلچسبی امور سیمت علاقائی مسائل پر بات چیت کی۔

اس ملاقات میں دونوں فریقین نے خطے کی تازہ ترین مسائل سمیت ایرانی صدر کی تجویز کردہ "ہرمز امن منصوبہ" اور  خلیج فارس میں اجتماعی سلامتی کے قیام سے متعلق روسی تجویز پر تبادلہ خیال کیا۔

 اس ملاقات میں ترکی صدر رجب طیب اردگان کے آنے والے دنوں میں روسی شہر سوچی کا دورہ اور صدر پیوٹن سے ملاقات کے تناظر میں شام کی حالیہ صورتحال کا جائزہ لیا گیا۔

یہ بات قابل ذکر ہے کہ اسلامی جمہوریہ ایران کے صدر مملکت ڈاکٹر "حسن روحانی" نے اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کے 74 ویں اجلاس کے موقع پر خلیج فارس اور آبنائے ہرمزمیں قیام امن و سلامتی سے متعلق اتحاد امید اور ہرمز امن منصوبے  کی تجویز دی۔

ایرانی صدر نے کہا ہے کہ «اتحادِ امید» کا اصل مقصد آبنائے ہرمز میں واقع تمام قوموں کی خوشحالی، ترقی اور سلامتی کو فراہم کرنا ہے.

انہوں نے مزید کہا کہ ایرانی تجویز کردہ منصوبے میں آبنائے ہرمز اور اس آگے کے سمندری علاقوں میں آزاد اور پُرامن جہازرانی، تیل اور توانائی تک آسانی رسائی اور تمام ممالک کو ایندھن ضروریات فراہم کرنا شامل ہیں.

 اس کے علاوہ ایرانی وززیر خارجہ "محمد جواد ظریف" نے  اپنے روسی ہم منصب "سرگئی لاروف" کی قیادت میں منعقدہ اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کے حالیہ اجلاس میں ایرانی صدر کی تجویز کی وضاحت کرتے ہوئے خطے میں قیام امن و سلامتی کی فراہمی کے حوالے سے سارے ہمسایہ ممالک کو اس منصوبے میں شمولیت کی تجویز دی۔

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
3 + 13 =